اہم خبریں

اسلام آباد ( ویب ڈیسک )سابق صدر پرویز مشرف نے ایم کیو ایم کے دونوں دھڑوں سمیت مذہبی و سیاسی جماعتوں کے اتحاد کے لئے دعا خیر دیدی ہے۔ 24جماعتوں نے آئندہ الیکشن میں اے پی ایم ایل کا ساتھ دینے کے لئے حامی بھر لی ہے۔ آل پاکستان مسلم لیگ کے ذرائع نے بتایا کہ آئندہ الیکشن کے لئے سابق صدر پرویز مشرف نے بھی ان کوششیں تیز کر دی ہیں۔ پیر پگاڑہ، مسلم لیگ ق ، سنی اتحاد ، اتحاد بین المسلمین، ایم کیو ایم پاکستان، پاک سر زمین سمیت تقریباً24گروپوں سے دبئی میں ملاقاتیں کر چکے ہیں اور آئندہ الیکشن میں ایک چھتری تلے الیکشن لڑنے کی بات کی گئی۔ ذرائع کے مطابق مسلم لیگ (ق) اور ایم کیو ایم نے کہا ہے کہ الیکشن2018ء کا الیکشن وہ اپنی شناخت پر لڑیں گے





بھارتی اورچینی افواج کےدرمیان مختصر ٹکراؤ،کشیدگی میں اضافہ،بھارتی فوجی زخمی
  16 اگست‬‮ 2017
بیجنگ (ویب ڈیسک)ہمالیہ کے متنازع علاقے میں بھارتی اور چینی فوجیوں کے درمیان مختصر ٹکراؤ کے بعد دونوں ممالک کی افواج کے درمیان جاری کشیدگی میں مزید اضافہ ہوگیا۔فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی نے اپنی رپورٹ میں بھارتی محکمہ دفاع کے حکام کے حوالے سے بتایا کہ منگل (15 اگست) کے روز چینی فوجیوں نے پینگوگ جھیل کے نزدیک بھارتی اہلکاروں پر پتھراؤ کیا۔خیال رہے کہ لداخ کے پہاڑی خطے میں موجود یہ جھیل ایک مشہور سیاحتی مقام ہے۔بھارتی عہدیدار کے مطابق چینی فوجیوں نے دو بار بھارتی علاقے میں داخل ہونے کی کوشش کی لیکن انہیں پیچھے دھکیل دیا گیا۔اپنی شناخت ظاہر نہ کرنے کی شرط پر ان کا مزید کہنا تھا کہ 'یہ ایک چھوٹا سا واقعہ تھا، چینی فوجیوں کی جانب سے پتھراؤ کیا گیا تھا تاہم جلد ہی صورتحال پر قابو پا لیا گیا'۔دوسری جانب مقبوضہ کشمیر کے شمالی علاقے، جہاں لداخ موجود ہے، کی پولیس کے مطابق حقیقی بارڈر جو 'لائن آف ایکچول کنٹرول' کے نام سے جانا جاتا ہے، پر جھڑپیں معمول ہیں۔





کھجورکو100برس سے زائدمحفوظ رکھنے کاطریقہ
سعودی عرب میں پہاڑی علاقوں کے رہنے والوں نے غذائی مواد کو محفوظ رکھنے کا ایسا طریقہ اپنایا ہے جس نے جدید ٹکنالوجی کو بھی پیچھے چھوڑ دیا۔ سوشل میڈیا پر گردش میں آئے ہوئے ایک وڈیو کلپ میں بتایا گیا ہے کہ کھجور کو کس طرح 100 برس سے بھی زیادہ عرصے تک محفوظ رکھا جا سکتا ہے۔ تاہم معلومات کے حوالے سے مختلف حلقوں میں بحث مباحثے کا بازار گرم ہے۔ اس حوالے سے سعودی عرب کے شہر تبوک میں قدیم ورثے سے دل چسپی رکھنے والی ایک عمر رسیدہ شخصیت چچا ابراہیم بن عاصی نے العربیہ ڈاٹ نیٹ کو بتایا کہ "وڈیو میں نظر آنے والا انوکھے قسم کا بڑا سا ٹکڑا 'الشنہ' کہلاتا ہے اور ہمارے آج کے دور میں یہ اپنی رونق کھو چکا ہے۔ الشنہ کو بکرے کی کھال سے بنایا جاتا ہے



جنات انسانی زندگیوں میں دخل اندازی کرتے ہیں اور یہ قرآن و سنت سے ثابت شدہ ہے۔جنات کی شرارتوں اور انکے مظالم کے حوالے سے بہت سے واقعات مشہور ہیں ۔حضرت سعد بن عبادہؓ جو شیر دل اکابر اَنصار میں شمار ہوتے بنو خزرج کے سردار تھے ان کے حوالے سے مختلف روایات مشہور ہیں کہ آپؓ کو جنات نے اس وقت شہیدکردیا تھا جب آپؓ ایک سوراخ میں پیشاب کررہے تھے ۔اس سوراخ میں جنات کا



راولاکوٹ،محکمہ خوراک آزادکشمیر کی طرف سے راولاکوٹ اور ضلع پونچھ کے دیگر علاقوں میں ناقص آٹا کی سپلائی جاری
  18 اگست‬‮ 2017
راولاکوٹ (آئی این پی) محکمہ خوراک آزادکشمیر کی طرف سے راولاکوٹ اور ضلع پونچھ کے دیگر علاقوں میں ناقص آٹا کی سپلائی جاری ، غیر معیاری مضحر صحت آٹا کے استعمال سے لوگ پیٹ گلے اور دی گر بیماریوں میں مبتلا ، راولپنڈی اسلام آبادکی بعض ملوں کا ناقص آ ٹا بھی راولاکوٹ شہر اور گرد ونواح کے چھوٹے بازارو ں میں دھڑا دھڑ فروخت کیاجارہا ہے لوگ پیسے دے کر بیماریاں خریدنے پر مجبور ہیں ۔عوام علاقہ پوٹھی بالا ، کھڑک ، متیالیمیرہ ، پوٹھی مکوالاں ، مجاہد آباد ،



سکردو(اوصاف نیوز) پاکستان مسلم لیگ ن کی حکومت علاقے کی ترقی کے لیے کوشاں ہے ۔ حکومت نے علاقے میں بہت ہی قلیل عرصے میں میگا پر وجیکٹس پر کا م شروع کیا ہے۔ محمد نواز شریف کے وژن کے مطابق علاقے کی تعمیر وترقی اور سیاحت کے فروغ پر بھرپور توجہ دی جارہی ہے ۔انہوں نے کہاکہ نواز شریف حکومت میں گلگت بلتستان میں بڑے بڑے منصوبوں پر کام شروع کیا گیا ان منصوبوں میں گلگت میں میڈیکل کالج اور کارڈیالوجی ہسپتال ،سکردو میں بلتستان یونیورسٹی اور گلگت سکردو روڑ ایسے منصوبے ہیں جن کی تکمیل سے بلتستان میں معاشی ترقی کے ساتھ ساتھ سیاحت میں بھی اضافہ ہوگا ۔ انہوں نے کہا کہ گلگت سکردو روڑ کو سابق حکومت کے دور میں ۶۴ ارب روپیے کی لاگت رکھی گئی تھی لیکن موجودہ حکومت نے اس منصوبے پر ۶۳ ارب روپیے کی لاگت پر منظوری دی ہے اس سال گلگت سکردو روڑ کی تعمیر کے لیے ایک ارب ۰۳ کروڑ روپیے موبائلزلشن کی لیے منظوری دی ہے۔ یہ بات وفاقی وزیر امور کشمیر و گلگت بلتستان چوہدری محمد برجیس طاہر نے آج سرفرنگاہ شگر میں بلتستان میں اولین سرفرنگاہ صحرائی کاروجیپ ریلی ،۷۱۰۲کے حوالے سے سرفرنگاہ شگر میں صحرائی کار وجیپ ریلی کے سلسلے میں قائم کی گئی ٹینٹ ویلج کا معائنہ کے دوران زرائع ابلاغ کے نمائیندوں سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہی ۔انہوں نے کہا کہ بلتستان میں اس قسم کے ایونٹ کے انعقاد کو نہایت اہم قرار دیا۔ انہوں نے بلتستان میں ایونٹ کے انعقاد پر وزیر اعلی گلگت بلتستان ، چیف سکریڑی اور بلتستان انتظامیہ کی کوشیشوں کو سراہا ۔ انہوں نے صحافیوں کے سوالات کو جواب دیتے ہوئے کہا



آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

ad

روزانہ کی 12بڑی خبریں حاصل کریں بزریعہ ای میل


تازہ ترین خبریں

کالم /بلاگ

مقبول ترین

دلچسپ و عجیب



یورپ



     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved