انگلیوں سے پانی نکلنے کامعجزہ
  31  دسمبر‬‮  2016     |     اوصاف سپیشل
حضرت جابر بن عبداللہ رضی اللہ عنہا فرماتے ہیں کہ حدیبیہ کے دن لوگوں کو پیاس لگی۔ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم کے سامنے پانی کی ایک چھاگل رکھی ہوئی تھی آپ صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم نے اس سے وضو فرمایا : لوگ آپ صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم کی طرف جھپٹے تو آپ صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم نے فرمایا : تمہیں کیا ہوا ہے ؟ صحابہ کرام رضی اللہ عنہہ نے عرض کیا : یا رسول اللہ ! ہمارے پاس وضو کے لئے پانی ہے نہ پینے کے لئے۔ صرف یہی پانی ہے جو آپ کے سامنے رکھاہے۔ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ سلم نے (یہ سن کر )دست مبارک چھاگل کے اندر رکھا تو فوراً چشموں کی طرح پانی انگلیوں کے درمیان سے جوش مار کر نکلنے لگا چنانچہ ہم سب نے (خوب پانی ) پیا اور وجو بھی کر لیا۔ (سالم راوی کہتے ہیں ) میں نے حضرت جابر رضی اللہ عنہ سے پوچھا: اس وقت آپ کتنے آدمی تھے؟ انہوں نے کہا: اگر ہم ایک لاکھ بھی ہوتے تب بھی وہ پانی سب کے لئے کافی ہو جاتا ، جبکہ ہم تو پندر سو تھے

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
94%
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
6%
پسند ںہیں آئی
 



 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

اوصاف سپیشل

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved