مطلوبہ شخص کی تلاش
  4  جنوری‬‮  2017     |     اوصاف سپیشل
ایک شخص عاشق خدا ہونے کا دعویٰ دار تھا۔ وہ دن کی روشنی میں چراغ جلا کر کچھ ڈھونڈنے کی کوشش کر رہا تھا۔ اس کا یہ عمل مذا ق کے مترادف تھا۔ کسی شخص نے اس سے دریافت کی کہ تم کیا تلاش کر رہے ہو۔ عاشق خدا نے فوراً جواب دیا کہ مجھے اس شخص کی تلاش جو اس روح کے تحت زندہ ہو جو اللہ تعالیٰ کی عطا کردہ ہے لیکن مجھے ایسا شخص دکھائی نہیں دے رہا۔ ا س شخص نے حیرانی کے ساتھ کہا کہ بازار انسانوں سے آباد ہے اور تجھے ان میں سے کوئی بھی انسان انسان نظر نہیں آتا کیا وجہ ے۔ عاشق خدا نے کہا کہ مجھے ایک ایسے انسان کی تلاش ہے جو غصے اور حرص کی حالت میں بھی صراط مستقیم سے نہ بھٹکے۔ عاشق خدا نے کہا کہ ایسے انسان کے لئے میری جان بھی حاضر ہے اور میں اس پر اپنی جان نچھاور کرنے سے بھی دریغ نہیں کرو ں گا۔ اس شخص نے جواب دیا کہ ایسا انسان ملنا محال ہے کیونکہ انسان تقدیر کے ہاتھ میں کھلونا ہے۔ وہ بذات خود بے اختیار ہے۔ تقدیر کسی تدبیر کو نہیں مانتی اور بڑوں بڑوں کو راہ سے بے راہ کر دیتی ہے۔ تیرا کیا خیال ہے کہ تیرے قدم سفر طے کرتے ہیں۔ تیرا خیال غلط ہے ۔ اللہ تعالیٰ نے حضرت ایوب علیہ السلام سے فرمایا تھا کہ تم اپنے صبر کو نہ دیکھو بلکہ صبر عطا کرنے والے کو دیکھو۔

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
100%
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 



 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

اوصاف سپیشل

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved