ممتاز قادری کے والد کو بیٹے کی قبر پر کیا حیرت انگیز واقعہ پیش آیا؟
  7  جنوری‬‮  2017     |     اوصاف سپیشل
اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)اہلسنت والجماعت کے معروف مذہبی سکالر مولانا خادم حسین رضوی نے عوام کے جم غفیر کو ممتاز قادری کا ایک واقعہ سنایا، بتانے لگے کہ ممتازقادری کو پھانسی دیدی گئی اور عوام کی جانب سے شدید ردعمل سامنے آنے لگا جو بڑھتے بڑھتے ڈی چوک پر دھرنے کی شکل اختیار کر گیا تو ممتاز قادری کے والد ان کو پانی پلانے کی کوششیں کرنے لگے۔ انکا کام تھا کہ گاڑی میں پانی کی بوتلیں بھرتے اور ڈی چوک میں لے جا کر دھرنے والوں کو پلاتے ۔ ایک روز انہوں نے بوتلوں میں پانی بھرا اور کار میں بھر کر لے جا رہے تھے کہ پولیس نے ان کی گاڑی پکڑ لی اور بند کر دی ۔ ممتاز قادری کے والد افسردہ ہو کر بیٹے کی قبر پر پہنچے اور کہا کہ بیٹا دیکھو تمہاری محبت میں لوگ یہاں آئے ہیں اب اگر بھوک اور پیاس کی حالت میں انہیں کچھ ہو گیا تو کیا ہوگا ؟ ان کے والد بتاتے ہیں کہ اس لمحے ممتاز کی قبر سے 2تلواریں باہر آئیں اور ممتاز کی آواز سنائی دی کہ بابا جان آپ پریشان نہ ہوں ، کل فیصلہ ہو جائے گا اور اگلے روز دھرنا ختم ہو گیا۔

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
68%
ٹھیک ہے
5%
کوئی رائے نہیں
9%
پسند ںہیں آئی
18%




  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

اوصاف سپیشل

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved