حضرت ادریس ؑ کی روح چوتھے آسمان پرکیوں قبض کی گئی
  3  جون‬‮  2017     |     اوصاف سپیشل

بخاری و مسلم کی حدیث ہے کہ شب معراج حضور اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نےحضرت ادریس علیہ السلام کو چوتھے آسمان پر دیکھا ۔حضرت کعب احبار رضی اللہ عنہ وغیرہ سے مروی ہے ۔ حضرت ادریس علیہ السلام نے ملک الموت سے فرمایا کہ موت کا مزہ چکھنا چاہتا ہوں ۔ کیسا ہووتا ہے ؟ تم میری روح قبض کر کے دکھاؤ ۔ ملک الموت نے اس حکم کی تعمیل کی اور روح قبض کر کے اسی وقت آپ کی طرف لوٹا دی اور آپ زندہ ہو گۓ ۔پھر آپ نے فرمایا کہ اب مجھے جہنم دکاؤ تاکہ خوف الٰہی زیادہ ہو چناچہ یہ بھی کیا گیا جہنم کو دیکھ کر آپ نے داروغہ جہنم سے فرمایا کہ دروازہ کھولو ۔میں اس دروازے سے گزرنا چاہتا ہوں ۔چناچہ ایسا ہی کیاگیا اور آپ اس پر سے گزرے ۔پھر آپ نے ملک الموت سے فرمایا کہ مجھے جنت دکھاؤ ۔وہ آپ کو جنت میں لے گۓ ۔آپ دروازوں کو کھلوا کر جنت میں داخؒ ہوۓ ۔تھوڑی دیر انتظار کے بعد ملک الموت نے کہا کہ اب آپ اپنے مقام پر تشریف لے چلۓ ۔آپ نے فرمایا کہ اب میں یہاں سے کہیں نہیں جاؤنگا ۔ اللہ تعالٰی نے فرمایا کہ کل نفس ذائقۃ الموت تو موت کا مزہ میں چکھ ہی چکا ہوں اور اللہ تعالیی نے فرمایا ہے کہ ہر شخص کو جہنم پر سے گزرنا ہے تو میں گزر چکا ۔ اب میں جنت میں پہنچ گیا ہوں اور جنت میں پہنچنے والے کے لۓ خداوند قدوس نے فرمایا ہے کہ "جنت مین داخل ہونے والے جنت سے نکالے نہیں جائیں گے ۔ ان مجھے جنت سے چلنے کے لۓ کیوں کہتے ہو؟ اللہ تعالٰی نے ملک الموت کو وحی بھیجی کہ حضرت ادریس علیہ السلام نے جو کچھ کیا میرے اذن سے کیا ۔ اور وہ میرۓ اذن ہی سے جنت میں داخل ہوۓ ۔لہٰذا تم انہیں چھوڑ دو۔وہ جنت میں ہی رہیں گے چناچہ حضرت ادریس علیہ السلام آسمانوں کے اوپر جنت میں ہیں اور زندہ ہیں(حوالہ تفسیر طبری)


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
95%
ٹھیک ہے
3%
کوئی رائے نہیں
1%
پسند ںہیں آئی
2%


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

اوصاف سپیشل

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved