’’جن ہیں یو دیو ‘‘ پاک فوج نے دنیا کو ہلا کر رکھ دیا ۔۔ ایسا اعزازاپنے نام کر لیا کہ توڑنا مشکل
  17  جون‬‮  2017     |     اوصاف سپیشل

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) ایلیٹ سپیشل فورسز سب سے بہترین اور سخت تربیت کی حامل فورسز ہوتی ہیں جو کسی بھی ملک کی حفاظت میں اہم کردار ادا کرتی ہیں۔ اس میں شامل فوجی وہاں بھی پہنچ جاتے ہیں جہاں عام فوجی نہیں جا سکتا۔ یہ سٹریٹجک ٹارگٹ کو نشانہ بناتے ہیں اور انتہائی باہمت ریسکیو مشن بھی سرانجام دیتے ہیں۔دنیا کے مختلف ممالک کی افواج نے سپیشل فورسز بنا رکھی ہیں اور اگرچہ ان کی درجہ بندی انتہائی مشکل کام ہے تاہم ان کے ماضی کے ریکارڈز کو دیکھتے ہوئے غیر ملکی خبر رساں ادارے نے ایک فہرست مرتب کی ہے جس میں پاکستان کو آٹھواں نمبر دیا گیا ہے اور اگر اس کی تاریخ دیکھی جائے تو اس نے یہ پوزیشن حاصل کر کے ایک بار پھر اپنی پیشہ ورانہ صلاحیتوں کو ثابت کر دیا ہے اور یہ بتا دیا ہے پاک فوج ہر طرح کے حالات کا مقابلہ کر سکتی ہے۔ 8:۔ سپیشل سروسز گروپ ان پاکستان (ایس ایس جی) ایس ایس جی کو اس کی پیشہ وارانہ صلاحیت کے باعث پوری دنیا میں جانا جاتا ہے اور اس میں شامل کمانڈوز سر اور چہرے پر منفرد ماسک پہنتے ہیں۔ اس میں شامل کمانڈوز کو سخت ٹریننگ کرنا پڑتی ہے جس میں 12 گھنٹوں کے دوران 36 میل کا سفر اور 50 منٹ میں 5 میل کا سفر بھی شامل ہے جو مکمل سازو سامان کیساتھ کیا جاتا ہے۔ اکتوبر 2009ءمیں ایس ایس جی کمانڈوز نے پاک فوج کے ہیڈ کوارٹر میں آپریشن کرتے ہوئے طالبان کی جانب سے یرغمال بنائے گئے 40 سے زائد لوگوں کو رہا کرایا۔ 7:۔ نیول سپیشل وار فیئر فورس سپین اس فورس کو 2009ءسے جانا جاتا ہے اور یورپ کی چند بہترین سپیشل فورسز میں سے ایک ہے۔ یہ فورس 1952ءمیں بنائی گئی کلائمبنگ یونٹ سے بنائی گئی اور پھر اسے ایلیٹ فائٹنگ فورس کا درجہ دیدیا گیا۔ اس فورس میں شمولیت ایک چیلنج سمجھا جاتا ہے اور 70 سے 80 فیصد امیدوار ناکام ہو جاتے ہیں۔ 6:۔ الفا گروپ روس یہ فورس دنیا بھر میں پہچان رکھنے والی سپیشل فورس میں سے ایک ہے۔ یہ فورس 1974ءمیں کے جی بی کی جانب سے تشکیل دی گئی اور اب اس کے جدید دور کے گروپ ایف ایس بی کے زیر اہتمام ہے۔ اس گروپ کو 2002ءمیں ماسکو ہوسٹیج کرائسس کے دوران شدید تنقید کا نشانہ بنایا گیا تھا جس دوران دہشت گردوں کو مارنے کیلئے استعمال کی گئی گیس کے نتیجے میں 120 یرغمالی ہلاک ہو گئے تھے۔ 5:۔ نیشنل جیندار میری انٹروینشن گروپ (جی آئی جی این) اخبار کے مطابق دنیا کی بہت کم سپیشل فورسز اس گروپ کے مقابل آ سکتی ہیں۔ اس گروپ کو خاص طور پر ایسے حالات سے نبردآزما ہونے کیلئے تیار کیا جاتا ہے جہاں دہشت گرد لوگوں کو یرغمال بنا لیتے ہیں۔ اس گروپ کا دعویٰ ہے کہ یہ 1973ءسے لے کر اب تک 600 سے زائد افراد کو رہا کروا چکا ہے۔ دلچسپ امر یہ ہے کہ اس گروپ کے ممبران کے چہروں کی تصاویر جاری کرنا فرانس میں غیر قانونی ہے۔ رپورٹ کے مطابق اس گروپ کا سب سے بہترین کارنامہ مکہ میں سعودی فوج کے آپریشن میں مدد کرنا ہے۔ چونکہ غیر مسلم وہاں داخل نہیں ہو سکتے تھے اس لئے اس گروپ کے 3 کمانڈوز نے اسلام قبول کیا اور پھر سعودی فوج کی مدد کی۔ اخبار کے مطابق اس فہرست میں چوتھا نمبر اسرائیل کی سپیشل فورسز کا آتا ہے جبکہ تیسرے نمبر پر برٹش سپیشل ائیر سروس، یو کے نیوی سیل سپیشل بوٹ سروس کا دوسرا نمبر اور امریکی نیوی سیلز کو پہلے نمبر پر رکھا گیا ہے۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
70%
ٹھیک ہے
10%
کوئی رائے نہیں
7%
پسند ںہیں آئی
13%


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

اوصاف سپیشل

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved