فیڈرل بورڈ آف ریوینیو نے سگریٹ انڈسٹری میں ٹیکس چوری کا سکینڈل بے نقاب کر دیا
  12  فروری‬‮  2017     |      کاروبار

اسلام آباد (روز نامہ اوصاف ) فیڈرل بورڈ آف ریونیو نے سگریٹ انڈسٹری میں ٹیکس چوری کے خلاف کریک ڈائون کرتے ہوئے کروڑوں روپے کی ٹیکس چوری کا سکینڈل بے نقاب کیا ہے ۔ تفصیلات کے مطابق کسٹم انٹیلی جنس و انویسٹی گیشن کو ذرائع سے اطلاع ملی کہ لاہور کے ایک ڈسٹری بیوٹر میسرز نیمیرک ڈسٹری بیوشن کی جانب جاپان ٹوبیکو انٹرنیشنل کے کیمل سگریٹ برانڈ درآمد کئے جا رہے ہیں جن پرقانون کے مطابق فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی اور سیلز ٹیکس ریٹیل قیمت کے لحاظ سے واجب الادا ہوتی ہے، لیکن ان درآمد کردہ سگریٹوں کی قیمت اتنی کم بتائی گئی کہ ان پر درآمد کردہ اشیاء کے حوالے سے فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی اور سیلز ٹیکس لاگو ہی نہیں ہوتا۔کسٹم ایٹی لجنس و انویسٹی گیشن کے ذرائع کے مطابق زیبا حئی اظہر ، ڈائریکٹر کسٹم انٹیلی جنس و انویسٹی گیشن، لاہور کی ہدایت پر ہونک بلوچ ڈپٹی ڈائریکٹر کسٹم انٹیلی جنس نے اس کیس کی انکوائری کرتے ہوئے انکشاف کیا کہ مذکورہ امپورٹر نے حال ہی میں 22 لاکھ سے زائد کے کیمل سگریٹ پاکستان میں درآمد کئے جن پر ریٹیل قیمت 57.26 روپے سے لے کر 61.53 روپے فی پیکٹ ڈیکلیر کی گئی تھی جب کہ مارکیٹ میں اصل ریٹیل قیمت سیلز ٹیکس سے علاوہ 93 روپے 74 پیسے سے لے کر 101روپے 80 پیسے تک ہے۔کسٹم انٹیلی جنس کے ذرائع کے مطابق فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی اور سیلز ٹیکس ریٹیل قیمت بشمول تمام ٹیکس، ڈیوٹیز پر لاگو ہوتا ہے ۔ اس طرح امپورٹر میسرز نیمیرک ڈسٹری بیوشن نے کلیرنگ ایجنٹ کی مدد سے غلط ریٹیل قیمت لکھتے ہوئے نو کروڑ ساڑھے چھ لاکھ روپے کی ٹیکس چوری کی ۔ ذرائع کے مطابق کسٹم ڈائرکٹوریٹ نے مذکورہ کیس مزید کاروائی کے لئے کلکٹر کسٹم لاہور کو بجھوا دیا ہے جو مذکورہ امپورٹر کے خلاف کسٹم ایکٹ 1969 کی دفعہ 79,80,32(1) (2) اور فیڈرل ایکسائز ایکٹ 2005کے سیکشن 3,12(4) اور سیلز ٹیکس ایکٹ 1990کے سیکشن 3,2(a) کے تحت کاروائی کرے گا۔‎


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

کاروبار

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved