سرینگر اور مظفر آباد کے درمیان تجارت بحالی کا فیصلہ
  7  اگست‬‮  2017     |      کاروبار

اسلام آباد(ویب نیوز)کنٹرول لائن کے آر پار حکام کے درمیان بات چیت کے بعد سرینگر اور مظفر آباد کے درمیان معطل تجارت 8 اگست سے بحال کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔21جولائی کو سرحدی قصبہ اوڑی میں کنٹرول لائن کے آر پار جاری تجارت کے تحت سرحد پار سے آئے ایک ٹرک ڈرائیور محمد یوسف شاہ کو بھی حراست میں لیا گیا تھا۔اس معاملے پر آزاد کشمیر انٹرا کشمیر ٹریڈ یونین کا ایک ہنگامی اجلاس طلب کیا گیا جس میں گرفتار ڈرائیور کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کرتے ہوئے اس کی فوری ہائی کا مطالبہ کیا گیا اور اس بات کا فیصلہ کیا گیا کہ آر پار تجارت احتجاج کے بطور معطل رکھی جائے گی۔گزشتہ روز اوڑی میں کنٹرول لائن پر آر پار حکام کے درمیان بات چیت کا فیصلہ کن دور منعقد ہوا۔ میٹنگ میں ڈپٹی کمشنر

بارہمولہ ڈاکٹر ناصر احمد نقاش، ایس ایس پی میر امتیاز حسین، تجارتی سامان کے کسٹوڈین جی ایم بٹ، ایس ڈی ایم اوڑی ڈاکٹر ساگر، ایس ڈی پی او اوڑی جاوید احمد اور ایس ایچ او اوڑی تبریز احمد خان نے شرکت کی۔ دوسرے جانب سے ایل او سی ٹریڈ اینڈ ٹریول کے ڈائریکٹر جنرل شاہد احمد اور کسٹوڈین و ٹی ایف او کاظمی حسین کے علاوہ کئی متعلقہ افسران اور اہلکار بات چیت میں شامل ہوئے۔ذرائع نے بتایا کہ فریقین نے تجارت کی بحالی پر خیالات کا تبادلہ کیا، آزادکشمیر کے حکام نے گرفتار ڈرائیور کا معاملہ بھی اٹھایا، تاہم حکام نے اس کی فوری رہائی کو خارج از امکان قرار دیا ہے۔ذرائع نے بتایا کہ اس طویل میٹنگ کے دوران اس بات پر اتفاق کیا گیا کہ آر پار تجارت8اگست منگل سے بحال کی جائے گی۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

کاروبار

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved