وزیر خارجہ کاانوکھا بیانیہ
  12  ستمبر‬‮  2017     |     کالمز   |  مزید کالمز

یہ بیان بھارتی وزیر خارجہ کا نہیں بلکہ پاکستان کے وزیر خارجہ خواجہ آصف کا ہے … وہ فرماتے ہیں کہ ''جیش محمدۖ اور لشکر طیبہ پر پاکستان سمیت پوری دنیا میں پابندی ہے … پاکستان کو اپنے دوستوں کو آزمائش میں نہیں ڈالنا چاہیے… ہمیں بھی جیش محمدۖ اور لشکر طیبہ کے لوگوں کی سرگرمیوں پر قدغن لگانی چاہیے …تاکہ دنیا کو بتاسکیں کہ ہم نے اپنا گھر بھی درست کرلیا ہے۔'' سابق وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے اپنے ایک انٹرویو میں اس بیان پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ''وزیر خارجہ خواجہ آصف کے ''اپنا گھر'' درست کرنے کے بیان سے شدید اختلاف ہے … اس کے بعد ہمیں دشمنوں کیا ضرورت باقی رہ جاتی ہے؟ ہم نے اپناگھر درست کرنے کیلئے جتنی قربانیاں دی ہیں … دنیا میں کہیں اس کی مثال نہیں ملتی … ہندوستان اور افغانستان میں دہشت گرد تنظیمیں کام کررہی ہیں … لیکن انہیں کوئی اپنا گھر درست کرنے کا مشورہ نہیں دیتا … چوہدری نثار علی خان نے کہا کہ کالعدم تنظیمیں ملک میں دندناتی نہیں پھر رہیں ہیں … اس بیانیئے پر شدید تشویش کے ساتھ ساتھ سخت اختلاف بھی ہے … ان کا کہنا تھا کہ ہمارے ہاں ایک گروپ کو علماء کا نام سن کر آگ لگ جاتی ہے … حالانکہ علماء کرام ملک کا موثر اور اہم طبقہ ہیں … ہمیں ان کی عزت اور ان پر اعتماد کرنا چاہیے۔'' یہ اس ملک کی بدقسمتی ہے کہ پہلے چار سالوں سے اس کا سرے سے کوئی وزیرخارجہ ہی نہ تھا اور اب خواجہ آصف کو اسلامی نظریاتی مملکت کا وزیر خارجہ بنادیا گیا … جنہیں یہ تک علم نہیں ہے کہ ان کے منہ سے نکلے ہوئے جملے چرا کر دشمن پاکستان کو ہی چوٹ پہنچائے گا' صرف چوہدری نثار علی خان کو ہی نہیں بلکہ خواجہ آصف کے اس بیانیئے سے پاکستان کی22کروڑ عوام کو شدید اختلاف ہے کیونکہ یہ بیانیہ تو بھارت اور بھارتی پٹاری کے دانش چوروں کا بیانیہ ہے ۔ وزیر خارجہ کے اس بیان سے شہ پاکر کچھ ''کن ٹٹے'' بلوں سے نکلے اور لگے جیش محمدۖ اور لشکر طیبہ پر سنگ برسانے … ساری دنیا جانتی ہے کہ جیش محمدۖ ہو یا لشکر طیبہ' یہ مقبوضہ کشمیر کے مظلوم مسلمانوں کی حق خودارادیت کے دفاع کی جنگ لڑنے والی تنظیمیں ہیں … ان کے جہاد سے بھارت کے دہشت گرد اور ان کے ہمنموا ڈرتے ہیں … برکس کانفرنس کے ممالک ہوں یا امریکہ وہ بھارت کی فریب کاری میں آکر ان تنظیموں کو دہشت گرد قرار دے رہے ہیں … اس حوالے سے حکومت پاکستان عالمی سطح پر سفارت کاری کرنے میں مکمل ناکام ثابت ہوئی … کوئی خواجہ آصف سے پوچھے کہ جس میاں نواز شریف کو سپریم کورٹ کے5 معزز ججز نے نااہل قراردیا اسے تو آپ نااہل تسلیم کرنے کیلئے تیار نہیں ہیں … اور جس جیش محمدۖ اور لشکر طیبہ کو مقبوضہ کشمیر کے مظلوم مسلمان اپنا نجات دہندہ سمجھتے ہیں … بھارت کے دبائو میں آکر ان کے خلاف آپ لڑنے مرنے پر آمادہ ہیں' تو یہ سب کیا ہے؟ جیش محمدۖ اور لشکر طیبہ کے خلاف اپنے کالموں میں بھارتی بیانیئے کو آگے بڑھانے والے دانش چور اور قلم فروش … نہ اس ملک کے خیر خواہ ہیں اور نہ ہی اس قوم کے ' پورے بھارت یا افغانستان میں کوئی ایک بھی ''خواجہ آصف'' نہیں کہ جو مودی اور اشرف غنی کو مشورہ دے سکے کہ اپنا اپنا گھر درست کرو …دہشت گردی ختم ہو جائے گی بلکہ وہ تو پاکستان میں کلبھوشن جیسے خونی ایجنٹ بجھواتے ہیں … بھارت کے شدت پسند وزرراء تو پاکستان کو توڑنے کی دھمکیاں دیتے ہیں … بھارتی وزیراعظم نریندر مودی تو بلوچستان اور مظفر آباد پر قبضے کے منصوبے بناتاہے … بنگلہ دیش جاکر1971 ء میں پاکستان کے ایک حصے کو کاٹ کر بنگلہ دیش بنانے کا اعتراف کرتا ہے … وہاں تو گائے ذبحہ کرنے کے شبہ میں مسلمانوں کا قتل عام کر دیا جاتا ہے … معصوم بچوں کے سروں کو نیزوں کی اینوں میں پرو دیا جاتاہے … برما میں بدھ مت دہشت گردوں کے ساتھ مل کر برمی فوج مسلمانوں کا جس طرح سے قتل عام کررہی ہے … وہ سب کے سامنے ہے 'لیکن وہاں تو کوئی مشورہ نہیں دیتا کہ اپنا گھر درست کرو اور دہشت گردی بند کرو۔ لیکن امریکہ اور بھارت سمیت پاکستان میں بسنے والے امریکی اور بھارتی پٹاریوں کے خرکاروں کو … مقبوضہ کشمیر کی آزادی کی خاطر ہزاروں جانیں نچھاور کرنے وای تنظیموں کو سوکنوں والے طعنے دیتے ہوئے نہ شرم آتی ہے اور نہ حیائ' ایسے بزدل بے شرموں کو چاہیے کہ وہ اسلامی نظریاتی مملکت کو چھوڑ کر اپنے غیر ملکی آقائوں کے دیس میںجابسیں ' چوہدری نثار علی خان پاکستان کے سوا چار سال تک مضبوط ترین وزیرداخلہ رہ چکے ہیں … ان کا یہ کہنا کہ کالعدم تنظیمیں پاکستان میں دندناتی ہوئی نہیں پھر رہیں … آب زر سے لکھے جانے کے قابل ہے؟ اور یہ بات ہے بھی درست' کون سی کالعدم جہادی تنظیم ہے کہ جو پاکستان میں لشکر طیبہ یا جیش محمدۖ کے طور پر کام کررہی ہے؟

کیا ویلفیئر کے کام کرنا گناہ کا کام ہے؟… کیا سیلاب زدگان' زلزلہ زدگان' غرباء و مساکین' یتمایٰ اور بیوگان کی خدمت کرنا جرم ہے؟ بھارتی پٹاری کے دانش چور خود تو خدمت خلق کے جذبے سے قطعاً عاری کورے اور نکمے ہیں … اور ساتھ یہ بھی چاہتے ہیں کہ کوئی دوسرا بھی خدمت خلق کے شعبے میں خدمات سرانجام نہ دے … برکس اعلامیے میں عالمی دہشت گرتی کا تعلق جیش محمد یا لشکر طیبہ سے جوڑنا بھارتی سازش کا حصہ ہے … خواجہ آصف نے اپنا گھر ٹھیک کرنے اور جیش محمدۖۖ اور لشکر طیبہ کے خلاف بیان دے کر ''ڈان لیکس'' والی معروف زمانہ سازش کو مکمل طور پر طشت از بام کر دیا۔ کاش کہ سابق وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان علماء کرام کا نام سن کر آگ بگولہ ہونے والے گروپ کے خرکاروں کا نام بھی بتا دیتے تو بہت اچھا ہوتا۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved