آزادکشمیرمیں بلدیاتی نظام نہ ہونے سے حکومتی سسٹم بری طرح متاثرہے،چوہدری سعید
  10  جنوری‬‮  2017     |     یورپ
بریڈ فورڈ(خصوصی فورم رپورٹ: اعجاز فضل سے) آزاد کشمیر کے سب سے صنعتی شہر میرپور سے تحریک انصاف کے سربراہ اور سابق وزیراعظم بیرسٹر سلطان محمود چوہدری کو شکست دیکر ایم ایل اے منتخب ہونے والے وزیر آزاد حکومت ریاست جموں وکشمیر چوہدری محمد سعید کے اعزاز میں گزشتہ روز روزنامہ اوصاف بریڈ فورڈ آفس میں ڈپٹی ایڈیٹر اور ٹیم نے خصوصی فورم کا انعقاد کیا جس میں میرپور شہر کے باسیوں کی اکثریت نے شرکت کی جبکہ مختلف سیاسی جماعتوں کے اعلیٰ عہدیداران اور سابق مشیران حکومت بھی فورم میں شریک ہوئے۔ اوصاف فورم میں لوگوں نے چوہدری محمد سعید کو حکومتی اور انکی اپنی کارکردگی پر کھل کر سوالات کئے۔چوہدری محمد سعید جب فورم میں شرکت کیلئے بریڈ فورڈ قائم روزنامہ اوصاف کے آفس پہنچے تو ڈپٹی ایڈیٹر اعجاز فضل کے ہمراہ شہر کے نامزد لارڈ میئر سمیت معزز شخصیات نے انکا استقبال کیا۔ اوصاف فورم سے خطاب کرتے ہوئے چوہدری محمد سعید نے کہا کہ میں ذاتی طورپر اوصاف کے ڈپٹی ایڈیٹر کا مشکور ہوں جنہوں نے مجھے اوصاف فورم میں مدعو کیا۔ چوہدری محمد سعید نے کہا کہ میری خواہش تھی کہ برطانیہ جاکر اوصاف فورم میں شرکت کروں اور لوگوں کے سوالات کو فیس کرسکوں کیوں کہ عوام نے الیکشن میں اپنا کام کردیا جسکے لئے میں انکے پاس گیا اب ہمارا وقت ہے کہ عوام کیساتھ کئے گئے وعدوں کو عملی جامہ پہنائیں انہوں نے کہا کہ میرپور کے عوام نے مجھ پر جو اعتبار اور اعتماد کیا ہے اسے ٹھیس نہیں پہنچنے دوں گا۔ وزارت حاصل کرنا میرا اصل مقصد نہیں بحیثیت ممبر اسمبلی رہ کر حلقے کیلئے زیادہ بہتر طریقے سے کام کئے جاسکتے ہیں۔ میرپور شہر مسائل کی دلدل میں پھنس چکا ہے جسکی طرف ماضی میں کوئی توجہ بدقسمتی سے نہیں دی گئی انہوں نے کہا کہ معاملات ٹھیک کرنے کیلئے بہت ساری مشکلات ہیں مگر وہ پوری ایمانداری سے شہریوں کے مسائل کے حل کیلئے کام کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ آزاد کشمیر میں بلدیاتی الیکشن نہ ہونے کے باعث عوام کونسلر سطح کے کاموں کیلئے ممبر اسمبلی سے توقع رکھتے ہیں جبکہ ممبر اسمبلی قانون سازی اور دیگر ایشوز کو کم ایڈریس کرپاتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بدقسمتی سے ریاست میں بلدیاتی نظام نہ ہونے کے باعث حکومتی نظام بری طرح متاثر ہے لوکل سطح پر اختیارات کی منتقلی سے ترقیاتی عمل تیز کیا جاسکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ آزاد کشمیر میں غیر معیاری تعلیمی نظام ہے جس طرف ماضی میں کوئی خاص توجہ نہیں دی گئی انہوں نے کہا کہ گزشتہ 60سالوں میں دنیا کے اندرتعلیمی نظام کے اندر بہت تبدیلیاں آئی ہیں جبکہ ہمارے ہاں 35سال پرانا تعلیمی سلیبس نصاب چل رہا ہے معاشرہ اسی وقت ترقی کرے گا جب تعلیمی نظام میں بہتری لائی جائیگی۔انہوں نے کہا کہ آزاد کشمیر میں پرائیویٹ سیکٹرز کے ذریعے تعلیمی نظام اور اداروں میں بہتری ممکن ہے انہوں نے کہا کہ میرپور کے 60فیصد تعلیمی ادارے پرائیویٹ سیکٹرز چلارہا ہے جہاں جدید ترین نصاب پڑھایا جارہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ میرپور میں بعض تعلیمی اداروں کی عمارتیں غیر معیاری ہیں جو حکومتی سیکٹر میں تیار کی گئیں اس طرف کبھی کسی نے توجہ نہیں دی کلیال شیرو کا سکول مکمل طورپر غیر معیاری ہے جو کسی بھی وقت بڑے حادثے کا شکار ہوسکتا ہے۔وزیراعظم راجہ فاروق حیدر نے اس سکول کی بلڈنگ تعمیر کرنے کا فوری اعلان کیا ہے۔ چوہدری محمد سعید نے کہا کہ یہ وہی سکول ہے جہاں سے لارڈ نذیر احمد نے بچپن میں تعلیم حاصل کی تھی۔ انہوں نے کہا کہ پائلٹ ہائی سکول کا کل رقبہ 64کنال تھا مگر قبضہ مافیا اور اداروں کی ملی بھگت سے اسکے رقبے پر کوٹھیاں تعمیر ہوچکی ہیں اب صرف 24کنال رقبہ رہ گیا ہے جس پر مکمل چار دیواری کروانے کیلئے اقدامات اٹھارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ میرپور کے سرکاری سکولوں کا انفراسٹرکچر مکمل طورپر غیر معیاری ہے۔ انہوں نے تارکین وطن سے بھی اپیل کی کہ وہ میرپور کے سکولوں کی بوسیدہ عمارتوں کی تعمیر کیلئے تعاون کریں اور تعلیمی میدان میں بچوں کو سہولیات فراہم کرنے کیلئے آگے بڑھیں۔ انہوں نے کہا کہ میرپور میں ووکیشنل اور ٹیکنیکل ایجوکیشن کیلئے مزید اقدامات اٹھانے کی اشد ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ میرپور میں 17سال سے سوئی گیس کے آفس کیلئے کوششیں کر رہے تھے ممبر اسمبلی منتخب ہونے کے بعد سب سے پہلے سوئی گیس کا آفس وزیراعظم پاکستان سے منظور کروایا ہے میرپور کے پورے شہر کا فیزیکل سروے مکمل ہوچکا ہے تاکہ شہر میں سوئی گیس فراہم کی جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ میرپور میں پینے کے صاف پانی کا بہت بڑا مسئلہ ہے جس طرف ماضی میں کوئی توجہ نہیں دی گئی اس وقت میرپور کیلئے کل 48ٹیوب ویل ہیں جن میں سے 30ٹیوب ویل خراب ہیں بجلی کی لوڈشیڈنگ کیوجہ سے بھی پانی کی ترسیل بری طرح متاثر رہتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے ہاں بل ادا کرنے کا نظام بہتر نہیں بعض لوگ غیر قانونی کنکشن استعمال کرتے ہیں جسکی وجہ سے محکمہ واٹر سپلائی نے محکمہ برقیات کے بجلی کی مد میں کروڑوں روپے دینے ہیں۔انہوں نے کہا برطانیہ میں پانی اور بجلی کی سپلائی کا نظام پرائیویٹائز ہونے کے باعث معیاری طریقے سے کام کررہا ہے۔ ممتاز دانشور اور روزنامہ اوصاف کے کالم نگار پروفیسر نذیر احمد تبسم نے وزیر حکومت سے سوال کرتے ہوئے کہا کہ آپ کی حکومت کا ایک سیکرٹری ایک جیب کی خاطر تعلیمی بورڈ کو تباہ کرنے پر تلا ہوا ہے۔ پروفیسر نذیر احمد نے کہا کہ شاہد محی الدین ایک غیر ذمہ دار شخص ہے حکومت کو اسکی سیاہ کاریوں کا نوٹس لینا چاہئے جس پر وزیر حکومت چوہدری محمد سعید نے پروفیسر نذیر احمد تبسم کو اس معاملے پر تعاون کا یقین دلایا اور کہا کہ وہ معاملے کا از خود نوٹس لینگے۔ برطانیہ میں پہلے مسلمان لارڈ میئر کا اعزاز حاصل کرنے والے محمد عجیب نے کہا کہ برطانیہ کی مختلف این جی اوز ہیلتھ سیکٹرز میں کام کرنا چاہ رہی ہیں ٹیلی میڈیسن میں اس وقت ملین پاؤنڈ خرچ کیا گیا ہے مگر حکومتی سطح پر اس حوالے سے کوئی تعاون نہیں سابق لارڈ میئر نے کہا کہ ایم ڈی اے میرپور پاکستان کا کرپٹ ترین ادارہ ہے اسکے نظام کو بہتر کرنے کیلئے فوری اقدامات اٹھائے جائیں اور اسکی اصلاح کی جائے جس پر وزیر حکومت چوہدری محمد سعید نے کہا کہ جو این جی او یا خیراتی ادارہ میرپور میں کام کرنا چاہتا ہے وہ ان سے ذاتی طورپر رابطہ کریں وہ رہنمائی اور ہر ممکن مدد کرنے کی بھرپور کوشش کرینگے۔ چوہدری محمد سعید نے کہا کہ تارکین وطن کے پولیس یا دیگر کیسز کو ایک علیحدہ سیٹ اپ بنایا جارہا ہے جو ایک ادارے کی شکل میں ہوگا ایک ایس ایس پی سطح پر کا آفیسر اور دیگر ملازمین تارکین وطن سے متعلقہ کیسز ڈیل کرینگے جس طرح پنجاب میں باقاعدہ اوورسیز ڈیسک قائم ہے بالکل اسی طرز پر یہ سیٹ اپ کام کرے گا انہوں نے کہا کہ ادارہ ترقیات ایم ڈی اے میں بہت خرابیاں ہیں مگر انکی درستگی اور بہتری کیلئے اقدامات اٹھارہے ہیں۔ ممتاز دانشور گوہر الماس خان، سابق مشیر اور پیپلزپارٹی کے سینئر رہنما سردار عبدالرحمان خان اور راجہ اے ڈی خان نے وزیر حکومت کو مبارکباد دی اور مسئلہ کشمیر کے حوالے سے حکومتی کردار کو مزید مؤثر کرنے پر زور دیا۔ گوہر الماس نے کہا کہ چند لوگ آزاد کشمیر اور برطانیہ میں تحریک کو ہائی جیک کئے ہوئے ہیں بغیر پلان کے برطانیہ کے دورے کرنے سے حکومتی ذمہ داران کو گریز کرنا چاہئے۔ صدر مسلم لیگ ن بریڈ فورڈ راجہ فضل حسین سیکرٹری جنرل راجہ مصدق خان، چوہدری ساجد پنوں، راجہ ناظم علی نے آزاد کشمیر اور بالخصوص میرپور کے متفرق مسائل کی طرف وزیر حکومت کی توجہ دلوائی۔راجہ سجاد ریاض نے خالق آباد میں نوجوانوں کیلئے گراؤنڈ کی تعمیر کے حوالے سے وزیر حکومت کی توجہ مبذول کروائی انکا کہنا تھا کہ گراؤنڈ نہ ہونے کے باعث نوجوان منشیات کی طرف جارہے ہیں اگر حکومت اس طرف توجہ دے تو نوجوانوں کو راہ راست پر لایا جاسکتا ہے۔ چوہدری ساجد پنوں نے کہا کہ محکمہ مال کے اہلکار لوگوں کے رقبہ جات پر قبضے کروارہے ہیں تارکین وطن کی زمینوں پر قبضے کئے جارہے ہیں۔ سینئر صحافی اور اوصاف کے کالم نگار ظفر تنویر نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ نیو سٹی میں لینڈ سلائیڈنگ لوگوں کی جیبوں پر ڈاکے ایک ریاض نامی شخص حکومت پر براجمان رہا۔ ظفر تنویر نے کہا کہ ن لیگ میں بھی اس وقت کوئی ایسا کردار موجود ہے۔ ڈپٹی ایڈیٹر اوصاف اعجاز فضل نے اپنے سوال میں کہا کہ آپ نے بیرسٹر سلطان کو شکست دی جو سابق وزیراعظم اور تحریک انصاف کے صدر ہیں میاں نواز شریف نے آپ کا ہاتھ پکڑ کر اس فتح پر خوشی کا اظہار کیا پھر راجہ فاروق حیدر نے آپ کو وزارت دینے میں دیر کیوں کی اور تھکی ہوئی وزارت اور محکمے کیوں دئے جنکے دائرہ اختیار میرپور تک محدود ہے۔ چوہدری محمد سعید نے سوالوں کے جوابات میں کہا کہ ہماری حکومت فاروق حیدر کی قیادت میں چل رہی ہے اس میں کسی اور کا عمل دخل نہیں۔ نیو سٹی میں ہونے والی لینڈ سلائیڈنگ اور دیگر ایشوز کو سنجیدگی سے لے رہے ہیں وزارت دینے کا اختیار فاروق حیدر کا اپنا اختیارہے۔ اوصاف فورم میں حاجی سلیم اقبال، راجہ خالد محمود سابق صدارتی ایڈوائزر چوہدری خالد محمود، سابق لارڈ میئر راجہ غضنفر خالق، سابق لارڈ میئر حاجی خادم حسین، ملک رحمت اعوان، خواجہ بشارت، آصف ڈی سی اور دیگر نے بھی سوالات کئے۔ راجہ غضنفر خالق نے کہا کہ برطانیہ میں ڈبل شناختی کارڈ رکھنے والے لوگوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے وفاقی حکومت کی طرف سے کئے گئے اعلان پر عملدرآمد نہ ہونے کے باعث لوگ شدید مشکلات سے دوچار ہیں لوگ اپنی جائیدادوں کی خرید وفروخت نہیں کرسکتے بعض لوگ پاکستان سفر تک نہیں کرسکتے اس پر آزاد حکومت وفاقی حکومت سے رابطہ کرے تاکہ یہ مسائل کم ہوسکیں۔ جس پر چوہدری محمد سعید نے کہا کہ بعض دہشت گردوں نے جعلی شناختی کارڈ حاصل کرلئے تھے اس وقت اس وقت دس ہزار شناختی کارڈ بلاک ہیں۔جن میں تارکین وطن کے شناختی کارڈ بھی ہیں۔ اس پر جلد وفاقی حکومت سے وہ رابطہ کرینگے تاکہ لوگوں کو ریلیف مل سکے۔ انہوں نے کہا کہ وہ بریڈ فورڈ میں اوصاف فورم میں آخر بہت خوش ہوئے ہیں۔ پہلی بار برطانیہ میں کسی ایسے فورم میں شرکت کی جہاں عوام نے براہ راست سوال کئے جس پر وہ اوصاف کے مشکور ہیں۔

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 




 انٹر نیٹ کی دنیا میں سب سے زیادہ پڑھے جانے والے مضا مینں
loading...

  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز


یورپ

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved