ورلڈ بینک نے 2017 کیلئے عالمی اقتصادی شرح نمو کے تخمینے میں کمی کردی
  11  جنوری‬‮  2017     |     یورپ
واشنگٹن (اے پی پی)ورلڈ بینک نے 2017 کیلئے عالمی اقتصادی شرح نمو کے تخمینے میں کمی کرتے ہوئے کہا ہے کہ نومنتخب امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی اقتصادی پالیسیوں نے غیر یقینی صورتحال پیدا کر دی ہے۔عالمی بینک کے سینئر پالیسی ساز ایہان کوسے نے ایک انٹرویو میں بتایا کہ دنیا بھر کی نظریں امریکی پالیسی سازوں پر لگی ہیں کہ وہ کیسی اقتصادی پالیسی تشکیل دیتے ہیں۔انھوں نے کہا کہ رواں سال کے دوران عالمی سطح پر اقتصادی شرح نمو 2.7 فیصد رہے گی جبکہ 2016 کے دوران یہ 2.3 فیصد رہی تھی۔تاہم امریکا کے حوالے سے ان کا کہنا ہے کہ 2016 کی 1.6 فیصد اقتصادی شرح نمو کے مقابلے میں رواں سال 2.2 فیصد رہنے کی توقع ہے۔ایہان کوسے نے کہا کہ ڈونلڈ ٹرمپ کی انتخابی پالیسی کے مطابق اگر کاروباری ٹیکسوں میں کمی کی گئی تو رواں سال اس کی اقتصادی شرح نمو 30 فیصد جبکہ 2018 میں 60 فیصد تک جاسکتی ہے۔اس کے علاوہ ڈھانچہ جاتی سرمایہ کاری کے بھی معیشت پر مثبت اثرات مرتب ہوں گے۔ان کا کہنا تھا کہ امریکی اقتصادی شرح نمو کے اثرات عالمی معیشت پر بھی مرتب ہوتے ہیں۔اگر امریکا میں شرح نمو ایک فیصد ہو تو اس سے ترقی یافتہ معیشتوں میں 80 فیصد اور ابھرتی معیشتوں میں 60 فیصد بہتری آئے گی۔

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 

رپورٹر   :  


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز


یورپ

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved