تنازعات کے حل کیلئے نئے سکیورٹی نظریات اپنائے جائیں
  11  جنوری‬‮  2017     |     یورپ

اقوام متحدہ (آئی این پی)چین نے اقوام متحدہ پر زور دیا ہے کہ تنازعات کے حل کیلئے نئے سکیورٹی نظریات اپنائے جائیں تا کہ پائیدار امن کے قیام کے لئے تصادم کو روکا جا سکے کیونکہ کوئی ملک اکیلا مکمل تحفظ فراہم نہیں کر سکتا اور نہ ہی دوسروں کی طرف سے عدم تحفظ کے شکار لوگوں کو تحفظ فراہم کیا جا سکتا ہے ۔ان خیالات کا اظہار اقوام متحدہ میں چین کے مستقل نائب نمائندے وو ہیٹاؤ نے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ انہوں نے کہا کہ عالمی برادری کو اقوام متحدہ کے چارٹر کے اصولوں کے تحت مقاصد حاصل کرنے چاہئیں اور مربوط ، معاون اور پائیدار نئے سکیورٹی نظریات کو اپنا نا چاہئے ، تصاد م کی بجائے عالمی شراکت دار ی کی بنیاد پر مذاکرات کرنے چاہئیں ، اقوام متحدہ کے موثر کردار ادا کرنے کے لئے یہ ضروری ہے کہ اتحاد کی بجائے شراکت داری کی بنیادپر کام کیا جائے ، اس سے جنگ کو روکا جا سکتا ہے اور امن کا قیام ممکن بنایا جا سکتا ہے ، اسطرح ضمانت کی بنیا دپر مساوات ، انصاف اور ہر کسی کے مفاد کیلئے مشترکہ کوششیں کی جانی چاہئیں ۔انہوں نے کہا کہ امن و ترقی کے فروغ کیلئے مشترکہ کوششیں کی جانی چاہئیں تا کہ جنگ ، تصادم اور دہشتگردی جیسے سلامتی کو درپیش خطرات سے موثر طورپر نمٹا جا سکے کیونکہ ان مسائل کی وجہ سے غربت اورپسماندگی جنم لیتی ہے ، اقوام متحدہ کو امن کے کلچر کی وکالت کرنی چاہئے ۔انہوں نے کہا کہ جب ہم تہذیبوں کے احترام کی بات کرتے ہیں تو اس کا مطلب یہ ہوتا ہے کہ کوئی تہذیب ، ثقافت یا مذہب ایک دوسرے سے بالا تر نہیں ہے ، اس لئے تمام تہذیبوں ، ثقافت اور مذاہب کے ساتھ باہمی احترام اور برابری کی بنیاد پر سلوک ہونا چاہئے ۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 
رپورٹر   :  


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز


یورپ

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved