عدالتیں انصاف نہیں کرسکتیں توتالے لگادیئے جائیں،مفتی فضل
  16  مارچ‬‮  2017     |     یورپ
ڈربی (پ ر) پاکستان رابطہ کونسل کے سنیئر وائس چیئرمین اور مرکزی جماعت اہل سنت کے جنرل سکریٹری مفتی فضل احمد قادری نے کہا ہے کہ پاکستان کے عوام کی نظریں پاناما لیکس کے فیصلے پر لگی ہوئی ہیں عدالت نے اگر حق اور انصاف پر مبنی فیصلہ دیا تو پھر اس ملک سے کرپٹ اور لیٹروں کی صفائی کی راہ ہموار ہوگی الیکشن میں دھا ند لی اور دولت کے بل بوتے پرایوانوں میں بیٹھنے والے عناصر سے چھٹکارہ حاصل کرنے میں مدد ملے گی عوام کے اندر ایک اعتماد کی فضا پیدا ہوگی اور ملک کسی خون خرابے سے بچ جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی ستر سالہ تاریخ میں الیکشن میں دھا ند لی اور کرپٹ عناصرپر پہلی بار ہاتھ ڈالا گیا ہے عدالتیں اگر انصاف نہیں کر سکتی تو ان پر تالے لگا دیئے جائیں پولیس ، تھانوں اور ججز کی کوئی ضرورت نہیں ہے یہ عوام کے مشکلات اور مصیبت کے سوا کچھ نہیں دے سکے عوام کا اعتماد ان پر ختم ہوچکا ہے اور موجودہ نظام عوام کو مجبور کر رہا ہے کہ اب فیصلے سڑکوں پر ہوں فوج، سیاستدان ناکام ہوچکے ہیں ان تمام لوگوں کو عوام آزما چکے ہیں ہر ایک نے کرپشن کی ہے استعمار کے ہاتھوں استعمال ہوئے ہیں اور ملک کو خانہ جنگی کی جانب دکھیل دیا ہے ۔ مفتی فضل احمد نے کہا کہ ہر رواز ملک میں ایک نیا بحران اور سکینڈل سامنے آتا ہے ملکی دولت ملک سے باہر منتقل کی جارہی ہے اس میں تمام ادارے ملوث ہیں ملک پر اتنا قرضہ ہے کہ اس کو ایم، ائی، ایف کسی بھی وقت حالات کو اپنے ہاتھ میں لینے کے لیے نوٹس جاری کرسکتی ہے دشمن نے ہر جگہ اپنے ایجنٹ بٹھا رکھے ہیں اور دہشت گردوں کو ویزے دے کر ملک میں بسایا جا چکا ہے اور عوام کے اندر صبر ختم ہوتا جارہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سیکولر لابنگ نے پاکستان اور اسلام کا امیج دنیا کے سامنے ایسا پیش کیا ہے کہ اسلام اور پاکستان کے خلاف نفرت پیدا کی گئی ہے دو قومی نظریئے اور مقاصد کو ختم کیا جا رہا ہے اور دشمن اپنے ناپاک عزائم میں کامیاب ہو رہے ہیں۔

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 





آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز


یورپ

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved