یورپ کے حق میں ووٹ دینے والے لبرل ڈیموکریٹس کو جوائن کرلیں،ایم پی ٹم فارن
  20  مارچ‬‮  2017     |     یورپ

یارک (خصوصی رپورٹ:اعجاز فضل سے) برطانیہ کی تیسری بڑی سیاسی جماعت لیبرل ڈیموکریٹس کی سیاسی شہرت اور گراف میں اضافہ ممبران کی تعداد 81 ہزار سے زائد ہوگئی' لیبرل ڈیموکریٹس کے سربراہ اور اپوزیشن لیڈر ایم پی ٹم فارن نے حکومتی ممبران پارلیمنٹ جنہوں نے یورپ کے حق میں اپنے ووٹ کا استعمال کیا ہے ان سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ لیبرل ڈیموکریٹس کو جوائن کرلیں ٹم فارن نے یہ مشورہ لیبر پارٹی کے ممبران پارلیمنٹ کو بھی دیا ہے ٹم فارن کا کہنا ہے کہ ٹوری حکومت کے ممبران پارلیمنٹ جنہوں نے یورپ کے حق میں ووٹ دیا ہے اب پارلیمنٹ میں حکومتی پالیسیوں کو سپورٹ کرنے سے گریز کرنا چاہئے۔ یہ بات لیبرل ڈیموکریٹس کے لیڈر نے یارک "York" میں منعقدہ پارٹی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ یورپ کے حق میں اپنے ووٹ کا استعمال کرنے والے ممبران پارلیمنٹ جن کا تعلق حکومتی بینچوں سے ہے لیبرل ڈیموکریٹس کے دروازے ان کے لئے کھلے ہیں ایسے ممبران پارلیمنٹ کو اپنا تشخص اور عزت نفس بحال رکھنے کے لئے یا تو پارلیمنٹ سے استعفیٰ دیں یا ٹوری اور لیبر پارٹی کو خیر باد کہیں۔ پارٹی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے لیبرل ڈیموکریٹس کی وفاقی پالیسی کمیٹی کے رکن اور برطانیہ کے ممتاز قانون دان کامران حسین نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اگر موجودہ صورتحال میں انتخابات منعقد ہوں تو لیبرل ڈیموکریٹس ٹوری اور لیبر کا برطانیہ سے مکمل صفایا کرنے کی صلاحیت رکھتی ہے۔ برطانیہ کے عوام سیاسی طور پر باشعور ہیں مگر دونوں سیاسی پارٹیوں نے لوگوں کے جذبات اور پارٹی سے وابستگی کا ناجائز فائدہ اٹھایا اور یورپ کے حوالہ سے ہونے والے ریفرنڈم پر انہیں مس گائیڈ کیا جس پر لوگ ناراض ہیں کامران حسین نے کہا کہ ٹوری پارٹی اور لیبر پارٹی سے تعلق رکھنے والے سابق چاروں وزراء اعظم ٹونی بلیئر' ڈیوڈ کیمرون' گورڈن برائون اور جان میجر کی یورپ اور دیگر ایشوز پر سوچ ہماری پارٹی سے مطابقت رکھتی ہے کامران حسین نے کہا کہ ٹوری اور لیبر پارٹی کی ملکی سطح پر سیاسی گرفت دن بدن کمزور پڑرہی ہے آج بھی اگر حکومت دوبارہ عوامی رائے عامہ جاننے کی کوشش کرتی ہے تو اسے ناکامی سے دوچار ہونا پڑے گا کامران حسین نے کہا کہ آنے والا دور برطانیہ کے عوام کے لئے ٹوری حکومت نے انتہائی تکلیف دہ بنا دیا ہے ج سے مسائل دن بدن بڑھ رہے ہیں جن کے حل کے لئے حکومت کے پاس کوئی منصوبہ یا حکمت عملی نہیں ہے۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز


یورپ

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved