میڈیامسلمانوں کومدارس سے بدظن کررہاہے،قاری عبدالرشید
  16  اپریل‬‮  2017     |     یورپ

اولڈھم(پ ر )دینی مدارس کے مطالعاتی دورہ کے دوران تقریبا ایک درجن کے قریب مدارس کے سالانہ جلسوں میں شرکت کا موقع ملا. میں نے طلبا کے سروں پر پگڑی سجاتے ہاتھوں میں تسبیح پڑھتے اور انعامات میں حاصل ہونے والی کتابیں ان کو اٹھاتے تو دیکھا ہے.لیکن کسی ایک مدرسے میں ایک طالب علم کو بھی اسلحہ لہراتے.بندوق اٹھاتے اور لوگوں میں دہشت پھیلاتے نہیں دیکھا.ان خیالات کا اظہار جمعیت العلما برطانیہ کے مرکزی رہنما مولانا قاری عبدالرشید نے دارالعلوم تعلیم القرآن راجہ بازار راولپنڈی کے سالانہ جلسہ تقسیم اسناد و انعامات اور ختم بخاری شریف کی تقریب میں شرکت کے بعد مختلف وفود سے گفتگو کرتے ہوئے کیا. اس موقع پر انہوں نے کہا کہ مدارس کے بارے میں جو کچھ میڈیا دکھاتا اور بتاتا ہے وہ کچھ اور ہے .اور مدارس کے مطالعاتی دورہ میں آنکھوں سے جو دیکھا اور کانوں سے جو کچھ سنا وہ بالکل ہی مختلف ہے .نتیجہ یہ نکلا کہ میڈیا مدارس دشمن ہے اور ان کے خلاف اقوام عالم کو گمراہ اور مسلمانوں کو مدارس سے بد ظن کر رہا ہے.جس میں وہ کبھی بھی کامیاب نہیں ہو سکے گا.بعد ازیں جامعہ صدیقیہ بستی لالہ رخ واہ کینٹ، کے سالانہ جلسہ ختم مشکوہ و تقسیم انعامات سے خطاب کرتے ہوئے قاری عبدالرشید نے کہا کہ دینی مدارس سے ہر سال علما حفاظ و قرآن ہزاروں کی تعداد میں تیار ہو کر جب معاشرے میں پھیلتے ہیں.تو دین اسلام کے خادموں کی اس پیداوار میں.مدارس دینیہ کے ان مخلص معاونین اہل خیر مسلمانوں کا بھی بہت بڑا حصہ شامل ہوتا ہے،جو سارا سال کبھی زکوہ وصدقہ اور کبھی عشر و خیرات اور کبھی قربانی کی کھالوں اور دیگر مدات سے مدارس دینیہ میں پڑھنے پڑھانے والوں کو معاشی طور پر بے غم رکھتے ہیں.اور طلبا و علما پورے اطمینان کے ساتھ شوال تا شعبان قرآن کے حافظوں.قاریوں اور نوجوان علما کرام کی تازہ کھیپ تیار کرنے میں لگ جاتے ہیں.ان کا کہنا تھا کہ مدارس والے ،وفاق المدارس العربیہ، کے سالانہ امتحانات سے پہلے رجب میں ہی قوم اور طلبا کے والدین کو اپنے پورے سال کی کار کردگی مدارس کے سالانہ جلسوں میں دکھا اور بتا کر نئے تعلیمی سال کی پلاننگ کرنے اور وسائل جمع کرنے کے لیئے اپنے منصوبے بنا کر پھر اہل خیر مسلمانوں کے سامنے رکھ دیتے ہیں.قاری عبدالرشید کا یہ بھی کہنا تھا کہ حساب و احتساب کا شاندار نظام دینی مدارس والوں کے پاس ہے. لاکھوں طلبا کو مفت میں جو تعلیم و تربیت مدارس میں دی جاتی ہے یہ اھل خیر مسلمانوں کے مالی تعاون کے بغیر ناممکن ہے. واہ کینٹ میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے قاری عبدالرشید نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ دنیا کی باقی این جی اوز انسانوں کی خدمت کرتی ہیں.رھائش دیں تو کھانے کے لیئے کسی دوسری طرف دیکھتی ہیں.علاج کروائیں تو تعلیم کے لیئے دوسری جگہ کی محتاج ھوتی ھیں.اس کے بر عکس دینی مدارس میں یہ چاروں چیزیں بیک وقت مہیا کی جاتی ھیں.اور پانچویں چیز ھے کہ مدراس میں دنیوی تعلیم کے لیئے سکولوں کا سلسلہ بھی شروع کردیا گیا ھے .اس لئیے ھم دعوے سے یہ بات کہہ سکتے ھیں کہ دینی مدارس کا مقابلہ دنیا کی کوئی ، این جی او ،ھر گز نہیں سکتی مدارس دینیہ ،خیر و فلاح،اور خدمت انسانی کے؛ مفت ؛سروس دینے والے مراکز ھیں.اور ان کو چلانے اور ان کے ساتھ تعاون کرنے والے ساری انسانیت کے ،ھمدرد و خیر خواہ، ھیں.جامعہ صد یقیہ کے طلبا کو آخری حدیث شیخ الحدیث مولانا ظھورالحق دامانی نے پڑھائی.جس کے ساتھ ھی آئندہ سال ان طلبا کے لیئے جامعہ میں ھی دورہ حدیث شریف کے اجرا کا اعلان کر دیا گیا. سالانہ جلسہ سے جمعیت علمائے اسلام کے ڈپٹی سیکرٹری جنرل مولانا امجد خان،مفتی سید فیصل ندیم،مولانا قاری چن محمد، حافظ محمد صدیق، قاری عبدالرشید، نے خطاب کیا.جبکہ شیخ الحدیث مولانا محمد امتیاز، مولانا عبدالخالق، مولانا عمر فاروق صدیقی ،قاری محمد تاج،قاری محمد ابراھیم،مولانا قمرالاسلام،مولانا ضیا الحق، مولانا عبدالرئوف صدیقی، مولانا سمیع اللہ، مولانا فتح محمد، قاری عبدالجلیل. لالہ محمد رفیق. مولانامحمد سلیم. مولانا سعید الرحمن.ابن قاری محمد معروف. قاری غلام مرتضی.مولانا بلال.مولانا انعام الحق.حافظ عبدالحمید خان.قاری محمد عظیم .عمائدین علاقہ اور جامعہ صدیقیہ کے اساتذہ زیر تعلیم طلبا کے اعزہ واقارب نے کثیر تعداد میں شرکت کی. مقررین نے بانیان جامعہ صدیقیہ شیخ عبدالسلام رحمہ اللہ وشیخ محمد صابر رحمہ اللہ کی خدمات کو بھی اجاگر کرنے کے ساتھ انہیں شاندار الفاظ میں خراج عقیدت پیش کیا. نقیب جلسہ. خطیب جامعہ صدیقیہ، مولانا ضیا الاسلام بن شیخ عبدالسلام رحمہ اللہ تھے.


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز


یورپ

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved