گلگت بلتستان کوصوبہ بنانے کامنصوبہ کبھی کامیاب نہیں ہوگا،ایوب راٹھور
  19  اپریل‬‮  2017     |     یورپ
لوٹن (کا مر ان عابد ) JKLFیوکے اینڈ یورپ کے مرکزی پارٹی کے ترجمان اور کشمیر ڈپلومیٹک کمیٹی کے چیئر مین ایوب احمد راٹھور ایڈووکیٹ نے اپنے تحریری بیان میں کہا ہے کہ گلگت بلتستان کو صوبہ بنانے کا حکومت پاکستان کا گمراہ کن منصوبہ کبھی کامیاب نہیں ہو گا اور کشمیری پوری دنیا میں ایک سیسہ پلائی دیوار کی مانند کھڑے ہو جائیں گے کیوںکہ کشمیر کی آزادی میں ایک لاکھ سے زائد ناحق کشمیریوں کا خون شامل ہے۔ چناروں کی وادیاں خون سے لبریز اس لیے نہیں کہ گلگت بلتستان کو سی پیک کی آڑ میں ہڑپ کر لیا جائے۔ اس بات کی نہ تو کشمیری ہر گز اجازت دیں گے اور نہ مہذب دنیا کو پاکستان منہ دکھانے کے قابل رہے گا کہ پاکستان کشمیر کو کس انداز سے ہڑپ کر رہا ہے او ر وہ کس منہ سے کشمیریوں کا وکیل بنا ہوا ہے اس لیے کہ وہ کشمیر کو آہستہ آہستہ ہڑپ کرتا جائے۔ انھوں نے حکومت پاکستان کو باور کر ا یا کہ خدارا اپنی اس نااہل اور مسئلہ کشمیر سے نابلد بیورو کریسی کو لگا م ڈالیں جن کو مسئلہ کشمیر کا پتہ ہی نہیں اور وہ چلے مسئلہ کشمیر کو حل کرنے ایسے نا اہل دانشور مسئلہ کشمیر پرپاکستان کا موقف ہی نہ صرف کمزور کر رہے ہیں بلکہ اقوام عالم کے سامنے پاکستان کو منہ دکھانے کے قابل نہیں چھوڑیں گے اور ستر سالہ کشمیریوں کا خون اور قربانیاں خاک میں مل جائیں گی ۔ ایوب راٹھور ایڈووکیٹ نے کہا کہ آزادکشمیر کے راہنما جب حکومت میں ہوتے ہیں تو ان کے ہاتھوں میں ہتھکڑیاں اور منہ پر تالے کیوں لگ جاتے ہیں اور جب اپوزیشن میں ہوتے ہیں تو وہی لوگ عوام کو بے وقوف بنانے کے لیے پریس کانفرنسز کے ذریعے گلگت بلتستان کو آزاد کرانے کی نعرہ بازی شروع کرتے ہیں ۔ ایوب راٹھور ایڈووکیٹ نے آزاد کشمیر اور مقبوضہ کشمیر کے راہنمائوں کو یک آواز ہو کر یہ پیغام دنیا ہوگا کہ گلگت بلتستان کو ہرگز صوبہ نہیں بنانے دیا جائے گا ۔ انھوں نے کہا کہ موجودہ وزیر اعظم کی مجرمانہ خاموشی کو تاریخ سیاہ حر وف میں لکھے گی ویسے تو راجہ صاحب بڑی بڑی باتیں کرتے تھے اب ان کی بولتی کیوں بند ہو گئی ہے۔ انھوں نے کہاکہ تمام ڈاس پورہ اس مسئلے پر ایک پلیٹ فارم پر ہے اور اگر ایسا کرنے کی کوشش کی گئی تو پوری دنیا میں کشمیری پاکستانی سفارت خانے کے باہر بھوک ہڑتال اور دھرنا دیں گے۔ ہر کشمیری اس مسئلے پر ایک آواز ہے۔

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 



 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





 انٹر نیٹ کی دنیا میں سب سے زیادہ پڑھے جانے والے مضا مینں
loading...
loading...


آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز


یورپ

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved