پانامہ پرعدالتی فیصلے سے ملک مزیدبحران کاشکارہوگا،پاکستان رابطہ کونسل
  20  اپریل‬‮  2017     |     یورپ
برمنگھم(پ ر) ملک کی بڑی عدالت سپریم کورٹ میں پانامہ لیکس کی تحقیقات کے حوالے سے پاکستان رابطہ کونسل نے جن خدشات کا اظہارکیا تھا وہ درست ثابت ہوئے کہ اس ملک کی تاریخ ہے کہ کسی کو کبھی سزا نہیں ملی ایسی کوئی عدالت نہیں بنی اور نہ کوئی جج پیدا ہو ہے جو کرپٹ لوگوں کو سزا دے سکے کسی بھی ملک میں کسی وزیر اعظم کے خلاف کیس ہو اور وزیر اعظم اپنی کرسی پر برجمان رہیں اور ان کے خلاف صاف اور شفاف تحقیقات نہیں ہوسکتی ملک کے تمام ادرے کرپشن کا شکارہیں اور حکمران ان کی سرپرستی کرتے ہیں اس طرح کس ملک اور عوام دشمن کو سزا نہیں دی جاسکتی اور سپریم کورٹ کا فیصلے سے ملک مذید بحران سے کا شکار ہوگا اور انارکی پھیلے گی۔ اس رد عمل کا اظہار پاکستان رابطہ کونسل کے چیئرمین مفتی فضل احمد قادری اور جنرل سکریٹری حافظ محمد ادریس نے پانامہ لیکس پر سپریم کورٹ کے فیصلے پر کیا انہوں نے کہا کہ سپریم کورٹ نے جس جے آئی ٹی بنانے کا فیصلہ دیا ہے یہ بھی ایک ڈرامہ ہوگا اس کے نتائج بھی یہی ہونگے وزیر اعظم کی موجودگی میں عدالت کوئی تحقیقات نہیں کر سکی تو اب کچھ نہیں ہوگا دوماہ فیصلہ محفوظ رہنے کے بعد یہ فیصلہ آنا تھا اس کیس میں اندرونی اور بیرونی بڑی بڑی قوتیں ملوث ہیں میاں نواز شریف کو نا اہل قرار دینا اور کوئی سزا دینا آسان کام نہیں ہے ان کے ہاتھ بڑے لمبے ہیں اس فیصلے کے بعد کرپٹ عناصر کو مذید تقویت ملے گی معاشی دہشت گرد اب کھلے عام کرپشن کریں گے اس ملک پر یہ طبقہ مسلط رہے گا یہی لوگ دولت اور گلو بٹوں کے زور پر الیکشن جیت کر اقتدار پر مسلط رہیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ جب تک کسی بڑے اور با اثر لوگوں کو سزا نہیں ہوگی عام لوگ بھی کسی قانون کی پابندی نہیں کرتے تھانوں سے لے کو عدالتوں تک ہر جگہ کرپشن کا بازار گرم ہیں کوئی کسی کو پوچھنے والا نہیں ہے پورا ایک کرپٹ مافیا ہے جس نے پورے ملک کو لپیٹ میں لے رکھا ہے پانامہ لیکس کیس سے عوام کو جو توقع تھیں وہ بھی ختم ہوگی ہیں کرپشن جیت گی اور انصاف کے دروازے بند ہوگے ہیں اب کوئی کیس عدالت میں لے جانے کاکوئی فائدہ نہیں ہوگا ملک کے اندر افراتفری پیدا کی جائے گی اور دہشت گردی میں اضافہ ہوجائے سیاسی اور معاشی دہشت گردوں کی حوصلہ افزائی ہوگی کہ وہ مرضی ہیں لوٹ مار کریں اس ملک میں کوئی سزا نہیں ہوگی۔

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
100%
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 




  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز


یورپ

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved