جنوبی پنجاب،شمالی وجنوبی وزیرستان کوصوبہ بناچاہیے،ملک عبدالمجید
  27  اگست‬‮  2017     |     یورپ

لوٹن (کامران عابد بخاری)مسلم لیگ ن کے راہنما اور مرکزی مجلس عاملہ کے رکن عبدالمجید ملک ایڈووکیٹ نے کہا کہ سائوتھ پنجاب اور شمالی و جنوبی وزیرستان کو صوبہ بنانا چاہیے تاکہ ان علاقوں میں بھی زیادہ سے زیادہ ترقی ہو سکے۔ پچھلے پانچ سالہ پیپلز پارٹی کے دور حکومت میں سابق وزیر اعظم محمد یوسف رضا گیلانی نے سائوتھ پنجاب کو صوبہ بنانے کا وعدہ بھی کیا تھا۔ ویسے بھی سابق وزیر اعظم پیپلز پارٹی محمد یوسف رضا گیلانی' سابق وزیر خارجہ شاہ محمد قریشی اور سینئر پارلیمنٹیرین جاوید حکیم قریشی سینئر پارلیمینٹیرین جن کو بہر صورت جنوبی پنجاب کا صوبہ اور عوام کا خیال رکھنا چاہیے۔ اس لئے کہ یہ ان بڑی ہستیوں کا علاقہ ہے اور اسکی تعمیر و ترقی میں ان کو بلخصوص اپنا کردار ادا کرنا چاہیے۔ یہ ان سیاستدانوں کو چاہیے کہ جس قدر جلدی ممکن ہو سکیں اس پر عمل پہرا ہوں۔ جبکہ پیپلز پارٹی کا سب سے پہلا اعلان بھی پارلیمنٹ میں یہی تھا کہ ہم سائوتھ پنجاب کو الگ صوبہ بنائیں گے۔ لیکن پاکستانیوں یہ مت بھولو کہ فاٹا نارتھ وزیرستان اور سائوتھ وزیرستان بھی پاکستان کا حصہ ہیں اور انکو بھی صوبائی اختیارات دلوائیں یا جغرافیائی لحاظ سے جس بھی صوبے میں آسکتے ہیں انکو ساتھ ملا کر ان کی حالت زار پر بھی رحم فرمائیں۔ ملک مجید ایڈووکیٹ نے کہا کہ پاکستان کے سکیورٹی اداروں اور پاکستان آرمی نے جس قدر محنت لگن سے قربانیاں دیں، اپنا خون بہا کر اور جانوں کے نذرانے پیش کر کے فاٹا کی دھرتی کو امن کا گہوارہ بنایا ہے۔ پاکستانی سیاستدانوں کو بھی اپنی سیاست بصیرت کا ثبوت دینا چاہیے اور بالخصوص فاٹا پر وفاقی حکومت پیپلز پارٹی اور پی ٹی آئی کو اپنا اپنا سیاسی کردار ادا کرنا چاہیے۔ تاکہ یہاں کے لوگ بھی سکھ کا سانس لے سکیں۔ فاٹا کی عوام کا بھی پاکستان بننے میں اہم کردار تھا۔ وہ پاکستانی ھیں اور انکے حقوق کی ترجمانی آپ سیاسی لیڈروں پر بہت ہی لازم ہے۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز


یورپ

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved