''ہم دہشت گردی سے ڈرنے والے نہیں''بارسلونامیں احتجاجی مظاہرہ
  29  اگست‬‮  2017     |     یورپ

بارسلونا،سپین (رپورٹ:کرن خان)بارسلونا میں 17 اگست،2017 کو لاس رامبلاز پر ہونے والے دہشت گردی کے حملے کے خلاف احتجاج اور متاثر ین سے اظہار یکجہتی کیلئے تاریخ ساز مظاہرہ ہوا۔ اس سلسلے میں دیاگونال سے کتالونیا سکوائر تک ریلی نکالی گئی۔جس میں تقریبا 10 لاکھ افراد نے شرکت کی ۔انھوں نے پلے کارڈز اور بینرز اٹھا رکھے تھے ۔ان کا ایک ہی نعرہ تھا کہ "ہم دہشت گردی سے ڈرنے والے نہیں "۔مظاہرہ میں سپین کے بادشاہ فلیپ ششم اور ان کی اہلیہ لیتیسیا نے بھی شرکت کی اور یہ پہلا موقع ہے کہ بادشاہ فلیپ نے کسی مظاہرہ میں شرکت کی ہو۔ مظاہرہ میں مسلمان اور پاکستانی کمیونٹی کی بھی بھرپور شرکت تھی ۔یہ احتجاجی مظاہرہ انتظامی حوالے سے تین حصوں میں تقسیم تھا۔ رضاکاروں، دہشت گردی کے واقعہ کے دوران خدمات سرانجام دینے والے پولیس اہلکار، ڈاکٹرز ،اور ایمبولینس کا عملہ کو صف اول میں شامل کر کے خراج تحسین پیش کیا گیا ۔ مظاہرے کے دوسری صف میں سپین بھر کی سیاسی قیادت موجود تھی، جن میں ہسپانوی بادشاہ فلیپ ششم، وزیراعظم ماریآنو راخوئی، کاتالان صدر کارلس پوچدیمونت اور مئیر بارسلونا آدا کولا،17 صوبوں کے وزرائے اعلی سمیت دیگر اتھارٹیز شامل تھیں۔اہم بات یہ ہے کہ ہسپانوی بادشاہ فیلیپ ششم اور وزیراعظم ماریانو راخوئی کے درمیان کھڑی آمنہ اکرم نے پاکستانی خواتین کی نمائندگی نے کی۔مظاہرے کا تیسرا حصہ عوام الناس کے لیے مختص تھا جہاں کاتالونیا اور سپین کے لاکھوں شہریوں کے ساتھ شانہ بشانہ عربی، پاکستانی اور بنگالی مسلمان،اور دیگر ممالک کے افراد بڑی تعداد میں موجود تھے۔اس مظاہرہ میں سانحہ بارسلونا کے دن پولیس،اور سکیورٹی اداروں کی کار کردگی پر عوام نے دل کھول کر داد دی ۔کہیں تالیاں بجا کر تو کہیں پولیس اہلکاروں کو گلے لگا کر اور کہیں پولیس کی گاڑیوں پر پھولوں کے گلدستے رکھ کر ۔ صرف پولیس ہی نہیں عوام نے شعبہ طب کو بھی خراج تحسین پیش کیا اور ڈاکٹرز کی محنت اور کارکردگی کو سراہا گیا۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز


یورپ

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved