برطانیہ نوازشریف کی دولت اورکاروبارکی تحقیقات کرے،مفتی فضل احمد
  30  اگست‬‮  2017     |     یورپ

برمنگھم(پ ر) پاکستان رابطہ کونسل کے چیئرمین مفتی فضل احمد قادری نے کہا ہے کہ امریکہ نے حبیب بنک سکینڈل میں نا اہل میاں نواز شریف کی کرپشن ااور منی لانڈرنگ کا بھانڈہ پھوڑ دیا ہے کہ کس طرح نواز شریف امریکی ڈالر اپنے اکا ئونٹ میں منتقل کرتے ہیں میاں نواز شریف کو ان حالات میں پاکستان سے فرار ہونے کی اجازت نہ دی جائے ابھی کئی گھپلے سامنے آئیں گے جے،آٹی، ٹی کی تحقیقات میں والیم 10 میں ابھی بہت سارے انکشافات ہونگے ملک دشمنوں کو کسی بھی صورت میں معاف نہیں کیا جا سکتا حکومت برطانیہ بھی ایسے لوگوں کو اپنے ملک میں آنے کی اجازت نہ دے کرپشن کی دولت دہشت گردوں پر خرچ کی جائے گی اور برطانیہ کی پُرامن فضا کو برباد کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ بڑے میاں کے بعد چھوٹے میاں شہباز شریف کی میٹرو بس میں کرپشن کو چائنہ کمپنی نے انکشاف کر دیا ہے کہ انہوں پونے دو کروڑ کا کمیشن کمایا ہے یہی وجہ ہے کہ شریف خاندان ملک میں کوئی ہسپتال اور تعلیم ادارہ بنانے کی بجائے ایسے کام کرتے ہیں کہ جس میں وہ کرپشن کر سکیں اس طرح یہ ملک دشمن سیاستدان پاکستان کو لوٹ کر الیکشن پر کرپشن کی دولت استعمال کر کے اقتدار میں آتے ہیں اور اپنے تحفظ کے لیے گلو بٹ اور دہشت گرد تیار کرتے ہیں اور یہ لوگ ہر جگہ اور ملک میںہوتے ہیں۔ مفتی فضل احمد نے کہا کہ برطانوی حکومت میاں نواز شریف کی دولت اور کاروبار کی تحقیقات کرے حبیب بنک سکینڈل سے واضع ہوتا ہے کہ کرپشن کا پیسہ امریکہ میں جمع کیا جاتا ہے اس میں امریکی ڈالر کتنے ہیں پانامہ کیس کے بعد ابھی کتنے انکشاف ہونگے برطانیہ کو ایسے لوگوں کو داخلہ نہیں دینا چاہے اس سے پہلے ایک پاکستان دشمن الطاف حسین نے پاکستان کے اندر دہشت گردی کرائی ہے اور اب بھی جو لوگ گرفتار ہو رہے ہیں ان کا لنک بھی لندن سے آ رہا ہے اس سے ثابت ہوتا ہے کہ برطانیہ کی سرزمیں پاکستان میں دہشت گردی کے خلاف استعمال ہو رہی ہے اور حکومت اس کا نوٹس نہیں لیتی پاکستانی کمیونٹی اپنے اپنے ممبر آف پارلیمنٹ کو اپنی تشویش سے آگا کرئے کہ پاکستان کے کسی کرپٹ، نا اہل اور دہشت گرد کو برطانیہ میں پناہ نہ دی جائے۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز


یورپ

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved