کرپشن فری پاکستان کا ہرشہری کو ساتھ دینا چاہے،چوہدری یوسف
  30  اگست‬‮  2017     |     یورپ

نیلسن(پ ر) جماعت اسلامی آزاد جمو ںوکشمیر برطانیہ نارتھ زون کے کنوینر چوہدری محمد یوسف نے کہا ہے کہ بانی پاکستان قائد اعظم محمد علی جناع نے جب بانی جماعت اسلامی سید مودودی کو ریڈیو پاکستان سے اسلامی نظام پیش کرنے کی دعت دی اور انہوں نے اسلام کے سیاسی، معاشی،معاشرتی نظام کو قوم کے سامنے پیش کیا تو ان کے خلاف سازشیں شروع ہوگئیں بانی پاکستان کی رحلت کے بعد سرکاری سطح پر سید مودودی کو بدنام کرنا شروع کر دیا اور فرقہ پرست مولویوں کو بھی حکومت میدان میں لے آئی کہ اسلام کا سیاست سے کوئی تعلق نہیں ہے اور وظیفہ خوروں نے اس قدر منفی پراپیگنڈہ کیا کہ دودھ کو کالا کر کے ثابت کیا اور اسلام کو بھی بدنام کیاور دو قومی نظریے کے خلاف کھل کر میدان میں آگئے۔ انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی آج ملک کی کرپشن سے پاک اور جمہوری جماعت کھل کر سامنے آگئی ہے آج میڈیا اور سپریم کورٹ بھی اعتراف کرتا ہے کہ جماعت اسلامی نے ہمیشہ پاکستان کی سالمیت کے لیے جنگ لڑی جب مشرقی پاکستان ٹوٹ رہا تھا تو اس وقت بھی جماعت اسلامی کے کارکن مکتی باہنیوں اور بھارتی فوج کے خلاف لڑ رہے تھے اور آج پاکستان کی خاطر بنگلا دیش میں پھانسیوں پر چڑ ھ گئے اور میاں نواز شریف ، آصف علی زرداری کی طرح ملک کو لوٹا نہیں اور جماعت کی قیادت کے لندن ،نیویارک اور دبئی میں کوئی بنک اکائونٹ نہیں ہیں اور اب حبیب بنک سکینڈل نے نا اہل وزیر اعظم میاں نواز شریف کی کرپشن اور منی لانڈرنگ کا پنڈورہ باکس کھول دیا ہے کہ کس طرح امریکی ڈالر لے کر اکائونٹ میں جمع ہوتے رہے ہیں۔ چوہدری یوسف نے کہا کہ جماعت اسلامی پانامہ کیس میں دیگر کرپٹ لوگوں کو قانون کے کٹہرے میں کھڑا کرے گی کرپشن فری پاکستان کا ہر پاکستانی کو ساتھ دینا چاہے کرپشن کا پیسہ الیکشن پر خرچ کر کے اقتدار میں آنے والے ملک دشمن عناسر سے قوم کو چھٹکارہ حاصل کرنا چاہے اور ملک کو پلید لوگوں سے پاک کیا جائے اور پاکستان کے مجرموں کا ساتھ دینے والے عناصر پر بھی کڑی نظر رکھی جائے اور سراج الحق جیسی صاف اور شفاف قیادت کا ساتھ دیا جائے۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز


یورپ

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved