مسلمانوں کیساتھ اقوا م متحدہ کاسلوک متعصبانہ ہے،ڈاکٹرخرم
  3  ستمبر‬‮  2017     |     یورپ

برمنگھم(پ ر) پاکستان رابطہ کونسل کے سنیئر وائس چیئرمین ڈاکٹر خرم بشیر نے کہا ہے برما میں جس طرح مسلمانوں کا قتل عام ہو رہا ہے اس پر عالمی امن کے ٹھیکیداروں اورعالمی انسانی حقوق کے علمبرداروں نے خاموشی اختیار کر رکھی ہے زندہ انسانوں کے اعضا کو کاٹا جا رہا ہے ایسے مناظر دیکھنا بہت مشکل ہے اور مسلم ممالک کے حکمرانوں کا کردار بھی انتہائی مایوس کن ہے کسی بھی مسلمان حکمران نے اس کے خلاف آواز بلند نہیں کی اور برما کے مسلمان انتہائی مشکل ترین حالات سے گذر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ بھی تماشہ دیکھ رہی ہے مسلمانوں کے ساتھ اس ادارے کا طرز عمل اور سلوک متعصبانہ ہے مسلمانوں کے مسائل پر کوئی توجہ نہیں ہے ستر سال سے فلسطین اور کشمیر کے مسلمان ظلم اور بربریت کا شکار ہیں اقوام عالم کے وعدے اور معاہدے بھی موجود ہیں مگر ان پر کوئی عمل درآمد نہیں ہے عراق اور افغانستان پر حملہ کرنے کے لیے راتوں رات قراردادیں منظور کر کے قبضہ کر لیا مگر بھارت اور اسرائیل کے قتل عام پر خاموشی چھائی ہوئی ہے اور اقوام متحدہ کا جن مقاصد کے لیے قیام عمل میں لایا گیا تھا اس میں مکمل ناکام ہے اور مسلمانوں کے اندر شدید رد عمل پایا جاتا ہے۔ ڈاکٹر خرم بشیر نے کہا کہ اسلامی کانفرنس کی تنظیم اور مسلم ممالک کا فوجی اتحاد بھی استعمار کے خوف اور ڈر کی وجہ سے کہیں نظر نہیں آتا مسلمان کے اندرقیادت اور اتحاد کا فقدان ایک دوسرے کے خلاف برسرپیکار ہیں اقتدار بچانے کے لیے منہ پر تالے لگا رکھے ہیں اور اب حکمرانیاں بھی خطرے میں پڑ چکی ہیں ایک ایک کر کے کہیں ممالک عدم استحکام کا شکار تباہ و برباد ہو چکے ہیں اور حالات مزید خراب ہو رہے ہیں اور غیر جمہوری قوتوں نے عوام کو یرغمال بنا رکھا ہے۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
100%
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز


یورپ

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved