سعودی عرب نصیحتیں کرنے کے بجائے عمل بھی کرے،خالدمحمود
  3  ستمبر‬‮  2017     |     یورپ

بلیک برن(پ ر) پاکستان رابطہ کونسل بلیک برن کے چیئرمین خالد محمود نے کہا کی حج کے خطبہ میں ڈاکٹر سعد بن ناصر الشتری نے حاجیوں کو بڑی نصیحت ہے کہ مسلم ممالک کے حکمران قران اور سنت کے مطابق حکمرانی کر کے اللہ کا قرب حاصل کریں کسی کو رنگ و نسل عربی اور عجمی کی وجہ سے فوقیت حاصل نہیں اور انہوں نے دعا کی کہ اللہ تعالیٰ ہمیں مسجد اقصیٰ واپس لٹا دے جبکہ حقیقت یہ ہے کہ کیا سعودی عرب میں اللہ کے احکامات کے مطابق حکمرانی کی جاتی ہے کسی کو آزادی رائے ہے کہ حکمرانوں بادشاہی نظام پر کوئی نکتہ چینی کر سکے امیر اور غریب کے لیے ایک قانون ہے ۔ انہوں نے کہا کہ رنگ اور نسل کی بنیاد پر پاکستان مسلمانوں کے ساتھ جو سلوک کیا جاتا اس کی اللہ نے کہاں اجازت دی ہے پاکستانیوں کے ساتھ جو حشر ہوتا ہے وہ کسی پوشیدہ نہیں ہے ان کے ساتھ کیسا سلوک کیا جاتا سعودی اور غیر سعودی میں بہت بڑا تعصب ہے کسی کو سعودی شہریت نہیں دی جاتی اور کوئی غیر سعودی اپنے نام پر کچھ خرید نہیں سکتا کسی کو جیل ہوجائے تو کوئی اس کی تحقیقات نہیں کرسکتا اور قانون سب کے لیے کہاں برابر ہے ۔ خالد محمود نے کہا ہے مسجد اقصیٰ پر اسرائیل کا غاصبانہ قبضہ ہے اور سعودی عرب نے اس کے خلاف کبھی آواز بلند نہیں کی مصر کے منتخب صدر کی حکومت کا تختہ الٹنے میں سعودی عرب کا ہاتھ تھا اور اس کے لیے فوجی ڈکٹیٹر کو پیسہ دیا گیا اور اسرائیل کے ساتھ جو تعلقات ہیں اس کی بھی خبریں آتی رہتی ہیں اور سعودی عرب کے علماء کسی بھی حوالے سے کوئی آواز بلند نہیں کرتے اور خاموش رہتے ہیں کشمیر میں بھارت جو ظلم اور قتل عام کر رہا ہے اس پر کبھی کوئی احتجاج نہیں کیا برما کے مسلمانوں کا جس طرح قتل ہو رہا ہے اس کو بند کرانے کے لیے کوئی تیار ہے سعودی عرب سے مسلمانوں کو بڑی توقعات ہیں کہ دنیا کابڑا امیر ملک ہے محض نصیحتیں کرنے کی بجائے کچھ عمل کرنے کی بھی ضرورت ہے ۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
75%
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
25%
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز


یورپ

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved