نیشنل اسٹوڈنٹس فیڈریشن گلگت بلتستان نے مطالبہ کیا ہے سلمان حیدر کو بازیاب کرائے جائے
  10  جنوری‬‮  2017     |     گلگت بلتستان

گلگت(اوصاف نیوز)اسلام اباد سے فاطمہ جناح یونیورسٹی کے پروفیسر ترقی پسند شاعر سلمان حیدر لاہور سے سماجی ورکرز وقاص گورایہ اور عاصم سعید کا لاپتہ ہونا لمحہ فکریہ ہے۔معاشرے کے اندر ایسے بے ضرر افراد کی اغوا سے ثابت ہوتا ہے کہ پاکستان کے بڑے بڑے شہروں میں بھی لوگوں کا تحفظ میں ادارے ناکام ہوچکے ہیں۔درس وتدریس کے شعبہ سے منسلک اور سماجی کارکنوں کے بارے میں وزیر داخلہ اور دیگر ادارے خاموش ہے۔ملک بھر کے ترقی پسند اور انسانی حقوق کے تنظیمیں سلمان حیدر اور دیگر سماجی کارکنوں کے اغوا پہ سخت تشویش کا اظہار کررہے ہیں مگر دارلحکومت میں موجود اقتدار کے مزے لینے والے اس معاملہ میں مکمل بے بس ہے۔ان خیالات کا اظہار عوامی ورکرز پارٹی گلگت بلتستان کے رہنما عنایت ابدالی،نیشنل اسٹوڈنٹس فیڈریشن گلگت بلتستان کے رہنما علی شیر و دیگر نے ایک اخباری بیان میں کیں۔ انہوں نے کہا ہے کہ شہرے اقتدار میں بھی معصوم لوگ محفوظ نہیں جو کہ بہت تشویش کا باعث ہے ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت اس مسلہ کو سنجیدگی سے لے ۔کالعدم تنظیمیں اور ان کے کارندے تو سرے عام گھوم رہے ہیں اور وزیر داخلہ کے مہمان بھی بن جاتے ہیں مگر سیاسی کارکنوں اور جمہوری قوتوں کیلئے اس ملک کے دارلحکومت بھی غیر محفوظ بنتا جا رہا ہے۔ عوامی ورکرز پارٹی گلگت بلتستان و نیشنل اسٹوڈنٹس فیدریشن گلگت بلتستان نے مطالبہ کئے ہیں کہ فوری طور پہ سلمان حیدر و دیگر کو بازیاب کیا جائے۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 
رپورٹر   :  


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

گلگت بلتستان

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved