حکومت لوڈ شیڈنگ پر قابو پانے کیلئے اقدامات کر رہی ہے ، حامد حسین
  10  جنوری‬‮  2017     |     گلگت بلتستان
گلگت( وقائع نگار خصوصی ) ایگزیکٹو انجینئر محکمہ برقیات گلگت حامد حسین نے اوصاف کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا ہے کہ محکمہ برقیات حکومت کے تعاون سے گلگت میں بجلی لوڈشیڈنگ پر قابو پانے کے لئے اقدامات کررہی ہے موجودہ ٹائم گلگت شہر میں لوڈشیڈنگ کے مکمل خاتمے کے لئے 50میگاواٹ بجلی درکار ہے جبکہ اس وقت کل پیداوار 27میگاواٹ ہے جس میں نلتر سے 8، کارگاہ 3.2،گوروجگلوٹ1.5میگاواٹ کو شامل کیا گیا ہے اگر شام کے بعد بھاری برقی آلات کا استعمال بے دریغ جاری رہا عوام نے اپنی من مانی جاری رکھی تو گلگت کے لئے 2سو میگاواٹ بجلی بھی کم ہوگی انہوںنے کہا کہ محکمہ برقیات میں بعض مافیا گروپ شامل ہیں جو چوری کے زریعے دیگر صارفین کو بجلی کنکشن دیتے ہیں محکمہ برقیات نے ایف آئی اے ٹیموں کے ساتھ مل کر سپیشل لائنوں اور غیر قانون بجلی کنکشن کے خلاف کریک ڈائون کرکے 33سو بجلی کنکشن کاٹ دی اور 616ہیٹرز سمیت 81عدد دیسی راڈ ضبط کرکے مزید 3سے 4میگاواٹ بجلی کو سسٹم میں شامل کیا گیا ہے اگر عوام بھی 100وولٹیج بلب کے استعمال کی بجائے انرجی سیور استعمال کئے تو مزید 3میگاواٹ بجلی کو سسٹم میں شامل کرکے بجلی بحران پر قابو پایا جاسکتا ہے انہوںنے اوصاف کو تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ محکمہ برقیات نے گلگت میں غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ پر قابو پانے کے لئے 26پینل بناکر برقیات عملے سمیت محلے سطح پر کمیٹیاں بھی تشکیل دی گئی ہیں اگر کوئی محلہ فی گھرانہ 10ایمپیئر سے کم استعمال کرکے کمیٹیوں کے ساتھ تعاون کرینگے تو اس علاقے کو بجلی لوڈشیڈنگ سے فری قرار دیکر لوڈشیڈنگ کو مکمل ختم کیا جائیگا وزیراعلیٰ گلگت بلتستان نے سختی سے احکامات دئے ہے کہ بجلی بحران پر قابو پاکرمزید لوڈشیڈنگ کوکم کیا جائے ہماری کوشش جاری ہے کہ خطے میں شمسی توانائی اور انرجی کے منصوبے شروع کئے جائیںگے جن سے گلگت شہر میں بجلی پیداوار کو 20گھنٹے تک پہنچاکر غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کو ختم کیا جائیگا انہوںنے کہا کہ اس وقت گلگت میں 43ہزار صارفین جو محکمہ برقیات کے کروڑوں کے مقروض ہیں جن سے ریکوری کو یقینی بنانے کے لئے خصوصی ٹیمیں بھی تشکیل دی گئی ہیں اور مکمل ریکوری کے لئے محکمہ برقیات نے ایف آئی اے کے ٹیمیں بھی شامل کرلئے ہیں جو غیر قانونی بجلی کنکشن سمیت ریکوری کے لئے کلیدی کردار اد اکرینگے انہوںنے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ غریب لوگوں کے لئے محکمہ برقیات نے خصوصی پیکج دیا ہے جو یکمشت بلات ادا نہیں کرسکتے ہیں وہ قسطوں کے زریعے بھی اپنے بجلی بقایاجات جمع کراسکتے ہیں اب عوام کا بھی فرض بنتا ہے کہ وہ برقیات عملے کے ساتھ مکمل تعاون کو یقینی بنائیں جب تک عوام کا تعاون ممکن نہیں ہوگا تب تک شہر سے بجلی لوڈشیڈنگ پر قابو پاناممکن نہیں انہوںنے کہا کہ گلگت شہر و دیگرمضافات میں بجلی لوڈشیڈنگ پر قابو پانے کے لئے شعور بیدار کرنے میں مقامی میڈیا کا مثالی کردار رہا ہے جس پر پرنٹنگ میڈیا کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں اور امید رکھتا ہوں کہ آئندہ بھی میڈیا بجلی چوروں کے خلاف نشاندہی کرے گی تاکہ محکمہ برقیات بجلی چوروں کے خلاف جاری کریک ڈائون کو کامیاب بناسکے گا بجلی چوروں اور بجلی بل ادا نہ کرنے والوں سمیت بھاری برقی آلات استعمال کرنے والوں سے کوئی رعایت نہیں بھرتی جائیگی ۔

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 



 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

گلگت بلتستان

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved