گلگت میں سی پیک کو نظر انداز کرنے پر پیپلز پارٹی کبھی خاموش نہیں رہے گی، محمد اسماعیل
  11  جنوری‬‮  2017     |     گلگت بلتستان
گلگت(اوصاف نیوز)پاکستان پیپلز پارٹی گلگت بلتستان کے صوبائی جنرل سیکر یٹری انجینئرمحمد اسماعیل نے میڈیا سیل سے جاری بیان میں کہا ہے مسلم لیگ ن کی حکومت گلگت بلتستان میں نظام حکومت چلانے میں مکمل طور پر ناکام ہو چکی ہے صوبائی حکومت کو برجیس طاہر اور حکومتی مشنیرا ی نے ایوان میں پہنچا دیا ہے وزیراعلی گلگت بلتستان اس وقت سیاسی تنہائی کا شکار ہو چکے ہے اور پیپلز پارٹی کے حق ملکیت تحریک سے بوکھلاہٹ کا شکار ہو گئے ہے اور پیپلز پارٹی کی قیادت کو اور عوام کو دھمکیاں دینے میں مصروف ہے ان کی دھمکیوں سے پیپلز پارٹی کی قیادت ڈرجائے گئی اور اپنے موقیف سے پچھے ہٹ جائے گئی وزیراعلی بھول چکے ہے کہ پیپلز پارٹی شہیدوں کی جماعت ہیں اورعوام کے حقوق کے حصول کے لیے پیپلز پارٹی کی قیادت اور جیالوں نے اپنے جان کا نظرانہ پیش کیا ہیں پاکستان پیپلز پارٹی گلگت بلتستان نے تین مطالبات پیش کر دیا ہے تحریک حق ملکیت ، آیئنی حقوق ، اور سی پیک میں گلگت بلتستان کو نظرانداز کرنے پر پیپلز پارٹی کبھی خاموشی اختیار نہیں کرے گئی موجودہ حکومت سابق پیپلز پارٹی کے منصوبوں پر صرف تختیاں لگا کر فوٹو سیشن میں مصروف ہے وزیر اعظم پاکستان میاں نواز شریف نے الیکشن کے دنوں میں گلگت بلتستان کے عوام سے جو سیاسی اعلانات کئے تھے وہ دو سال کا عرصہ گزار چکا صوبائی حکومت ان پر عمل درآمداد کروانے پر ناکام ہو چکی ہے پیپلز پارٹی کی قیادت اور جیالے اب اگلے مرحلے میں ایک مرتبہ پھر عوامی طاقت سے عوام کو ان کی ذمینوں کا مالک بنا کر دم لینگے انھوں نے مزید کہا کی وزیر اعلی عوام کو یہ بھی بتا دے کہ ان کے وزراء نے گلگت بلتستان کی عزت نیلام کر دی اور بجائے وزیر اعلی ان کے خلاف کاروائی کرتے وہ اپنے وزاء کو بچانے کی ناکام کوشیش کر رہے ہے وزیراعلی عوام کو جواب دیں کہ اس نے انفارمیشن محکمہ کے ڈی دی کو راتوں رات اسلام آباد کیوں بھج تھا اگر وہ وزیراعلی کو اعتماد میں لیکر نہیں گئے تو وہ کن وزارء کے کہنے پر گئے ؟ اب تک اس کے خلاف کاروائی عمل میں کیوں نہیں لائی گئی وزیراعلی نے جو کمیٹی بنائی ہے وہ انفارمیشن محکمہ کے ڈی ڈی کو بھی شامل تفتش کرے تاکہ اصل چہرے عوام کے سامنے آ سکے انھوں نے مزید کہا کی تحقیقاتی کیمٹی کو اسلام آباد جاکر تحقیقات کرنے ہونگے صرف وزیراعلی کی طرح اخبارت میں بیانات دینے سے اس مسئلہ کا حل نہیں نکاے گا ۔

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 



 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

گلگت بلتستان

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved