شہید امن سیف الرحمن کی قربانی جی بی میںپائیدار قیام امن کیلئے تھی،فاروق ججالی
  18  مارچ‬‮  2017     |     گلگت بلتستان

گلگت (روزنامہ اوصاف) شہید امن سیف الرحمن کی عظیم قربانی کسی خاص زات یا گروہ کیلئے نہیں تھی ۔ شہید کی قربانی پورے گلگت بلتستان میں پائیدار قیام امن کیلئے تھی ۔ اسلئے جی بی کے تمام امن پسند سیاسی ، مذہبی اور علاقائی تنظیموں کے اکابرین اور کارکنوں تمام مکاتب فکر کے علماء کرام اپوزیشن رہنمائوں شاہ بیگ اور امجدایڈووکیٹ اور کابینہ کو شہید امن کی برسی میں خصوصی شرکت کی دعوت دیتے ہیں ۔ ان خیالات کا اظہار مسلم لیگ ن یوتھ ونگ کے سینئر رہنما فاروق ججالی اور عادل حسین نے حلقہ نمبر ایک گلگت کے اندر برسی کے حوالے سے منعقدہ ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے یا۔ انہوں نے کہا کہ شہید امن سیف الرحمن نے ایک ایسے دور میں مذہبی انتہا پسندی کے خلاف علم جہاد بلند کیا جس دور میں بھائی بھائی کے خون کا پیاسا بن گیا تھا ۔ باپ بیٹے میں بھی مسلک کی بنیاد پر نفرت کی دیوار کھڑی تھی ۔ عرض معاشرے کے تمام طبقات مذہبی بے راہ روی کا شکار تھے ۔ فرقہ واریت معاشرے کے رگوں میں شرائیت کر گئی تھی ۔ معاشرتی برائیوں کی اصلاح کرنے کا ذمہ دار طبقہ علماء کرام بھی اپنے اپنے فرقوں کی پشت پناہی میں لگے ہوئے تھے ۔ معاشرے ک پستی کا یہ حال ہو چکا تھا کہ دست و گریباں فرقوں کے درمیان اگر کوئی صلح صفائی کی بات کرتا تو اس کو غدار و کافر نہ جانے کیا کے القابات سے یاد کیا جاتا ایسے میں اگر کسی مرد قلندر نے گلگت میں امن کیلئے قدم بڑھایا تھا تو وہ شخص کوئی اور نہیں شہید امن سیف الرحمن خان تھے ۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 
رپورٹر   :  


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

گلگت بلتستان

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved