پی پی رہنماوں کیساتھ مناظرہ کرنا توہین سمجھتا ہوں،عرفان احمد
  18  مارچ‬‮  2017     |     گلگت بلتستان
استور(روزنامہ اوصاف )پاکستان پیپلز پارٹی گلگت بلتستان کے سنیر عہدداروں کو یہ باور کروانا چاہتا ہوں کہ وہ اپنے کارکنوں کو یہ ہدایت جاری کرئے کہ اخبارات میں پارلیمانی ذ بان استعمال کرئے اور وہ اس طرح کی غلط بیان باذی سے بازآ جائے تنقید برائے اصلاح اپوزیشن کا حق ہے اور تنقید برائے تنقید ذاتیات ہو سکتے ہیں ان خیالا کا اظہار پاکستان مسلم لیگ (ن) لیبر ونگ استور کے صدر عرفان احمد نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پارلیمانی سیکرٹری برکت جمیل نے جس طرح سے 2سالوں میں استور کو ترقی کی راہ میں گامزن کر دیا ہے اتنے ترقیاتی کام پیپلز پارٹی کے پورئے پانچ سالہ دور میں نہیں ہوئے ہیں پیپلز پارٹی کے چند لوگ موصوف کی اچھی کاکردگی پر اس کی ذات پرتنقید کر کے بیان باذیاں کر رہے ہیں لیکن ہم ان کو یہ باور کروانا چاہتے ہیں کہ استور کسی کی میراث نہیں تو آنے نہیں دینگے یاد رہے ضلع استور مسلم لیگ (ن) کا گڑھ تھا ہے اور رہے گا ۔میں پیپلز پارٹی استور کے رہنماوںکو یہ باور کروانا چاہتا ہوں کہ پہلے سابق وزیر اعلیٰ مہدی شاہ نے جو کرپشن کیا ہے اس کا حساب نیب اور ایف آئی ائے کو دیں اس کے بعد ہمارئے ساتھ مناظرہ کریں کیونکہ پیپلز پارٹی کے رہنماوں کے ساتھ مناظرہ کرنا بھی توہین سمجھتے ہیں پیپلز پارٹی نے جس طرح سے گلگت بلتستان کا بھیڑہ غرق کر کے رکھ دیا ہے وہ عوام کے سامنے ہے انہوں نے اس موقعے پر مزید کہا کہ پیپلز پارٹی کی حکومت نے اپنے دور اقتدار میں تعلیم جیسے مقدس شعبے میں 5،5لاکھ پر کھلم کھلا سر عام چوک پر نوکریاں فروخت کر دیا تھا۔جبکہ ہماری حکومت نے این ٹی ایس کے ذریعے صاف اور شفاف میرٹ پر بھرتیاں کروایا ہے پیپلز پارٹی استور کو چا ہیے کہ پہلے یہ بیان پڑ ئے اورپھر مناظرئے کے لئے آجائے ورنہ کہی ایسا نہ ہوں کہ دوران مناظرہ بھاگ جائے ۔

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 

رپورٹر   :  



 انٹر نیٹ کی دنیا میں سب سے زیادہ پڑھے جانے والے مضا مینں
loading...


آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

گلگت بلتستان

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved