مشال خان کی بے دردانہ موت انتہا پسند سوچ کی عکاس ہے،آصف میر
  17  اپریل‬‮  2017     |     گلگت بلتستان

گلگت ( اوصاف نیوز ) مشال خان کی بے دردانہ موت سے یہ بات واضح ہوتی ہے کہ پاکستان میں اب بھی مذہبی انتہا پسند سوچ اپنی پوری آب و تاب کے ساتھ معاشرے میں جڑیں پکڑنے میں مصروف ہے۔اس سوچ کے پیچھے مشعال خان جیسے انسانوں کا قتل عام ہوتا رہے گا۔ان خیالات کا اظہار پیپلز پارٹی کے رہنما آصف میر نے اپنے ایک اخباری بیان میں کیا۔ان کا مزید کہنا تھا کہ انتہا پسند سوچ کو ختم کرنے کیلئے جو عملی اقدامات اٹھانے چاہئے وہ ابھی تک نہیں اٹھائے جارہے جسکی وجہ سے قیمتی انسانی جانوں کا ضیاع جاری ہے پاکستان مسلم لیگ نواز گروپ اس سوچ کی پیداوار ہے جب تک پاکستان میں لبرول طاقتوں کا ساتھ نہیں دیا جائے گا تب تک اسطرح کے افسوسناک واقعات ہوتے رہیںگے۔ان کا مزید کہنا تھا کہ اس واقعے میں ملوث اصلی کرداروں کو سامنے لاکر قرار واقعی سزا دی جائے۔کے پی کے حکومت اور عدالت اس واقعے کا فوری نوٹس لے کر اس ظلم کے خلاف انصاف دلانے میں اپنا کردار ادا کرے


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 
رپورٹر   :  


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

گلگت بلتستان

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved