ہنگامی حالات سے نمٹنے کیلئے گوداموں میں 65 ہزار گندم بوری سٹاک کر لی، سیکرٹری خوراک
  18  اپریل‬‮  2017     |     گلگت بلتستان

گلگت (محمد ذاکر سے ) سکریٹری خوراک گلگت بلتستان برہان آفندی نے کہاہے کہ گلگت بلتستان میں گندم کا کوئی بحران نہیں اور نہ ہی گندم ریٹ میں اضافہ کیا جائے گا۔ عوام فکر نہ کریں محکمہ خوراک نے قدرتی آفات سے بھی نمٹنے کے لئے گلگت کے مختلف ڈسٹرکوں میں محکمہ خوراک کے گوداموں میں ایمر جنسی 65 ہزار سے زائد گندم بوری سٹاک کر لئے ہیں ۔ محکمہ خوراک سیل پوائنٹ کے ذریعے عوام کو معیاری اور با آسانی آٹا فراہمی کو یقینی بنانے کے لیے اقدامات کئے ہیں ۔ سکریٹری خوراک نے اوصاف سے گفتگوکر تے ہوئے کہاہے کہ محکمہ خوراک اور فلور ملز مالکان کے مابین تحریری معاہدے طے پاگئے ہیں ۔ معاہدوں کے تحت فلور ملز مالکان معیاری آٹا پسائی کے پابند ہیں ۔ا ب تک کسی شہری کی جانب سے کوئی شکایت موصول نہیں ہوئی ۔ اگر اس کے باوجود بھی کسی ملز آٹا پسائی میں شکایات ہیں تو اپنے متعلقہ سی ایس او کو شکایات درج کرائیں ۔ ٹھوس شواہد موصول ہونے کے بعد غیر معیاری آٹا پسائی میں ملوث فلور ملز مالک کے خلاف سخت قانونی کاروائی کر کے فلور میل کو ہمیشہ کے لئے سیل کردیں گے ۔ سکریٹری خوراک برہان آفندی نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ ماضی میں گندم مافیا نے عوام کے گندم کے ساتھ بھی مذاق کرلئے لیکن اب کسی کوبھی عوامی گندم بلیک میل کرنے کی اجازت نہیں دیں گے۔ اسلئے محکمہ خوراک نے گندم مافیاز اور �آٹا مافیاز کو لگام دینے کا چلان تیار کرلیا ہے ۔ جس کے تحت عوام کو انکے گھر کے دہلیز میں ہی با آسانی آٹا مہیا ہو گا۔ اگر عوامی گندم میں پیرا پھیری میں ملازمین بھی ملوث پائے گئے تو اسی دن انہیں گھر بھیج دوں گا۔ کسی کو بھی عوام کے ساتھ مذاق کرنے کی اجازت نہیں دوں گا


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

گلگت بلتستان

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved