سیلفی لینے نوجوان لڑکی اب کبھی واپس نہیں آئے گی
  15  مارچ‬‮  2017     |     دلچسپ و عجیب

اسلام آباد (روز نامہ اوصاف)15 سالہ یمنی لڑکی کی لاش جو کہ سیلاب کے پانی سے ایک ماہ قبل دودراز کے علاقے میں بہہ گئی تھی ، اسے پیر کی صبح اس کے بھائی اور سول ڈیفنس ورکر نے وادی ہیرہ سے نکال لیا ہے ۔عرب نیو ز کے مطابق میجر محمد الحمادی کا کہناتھا کہ”کافی جاری رہنے والی کوششوں اور ایک مشکل آپریشن جس میں 240 سے زائد سول ڈیفنس کے لوگ تھے کے بعد اس لڑکی لاش کو تلاش کیا گیا“۔لڑکی جس کا نام تھکرا الہوام ہے وہ 13 فروری سے سیلا ب کے آنے والے پانی کےباعث لاپتہ تھی۔الحماد کا کہنا ہے کہ یہ سرچ آپریشن 15 کلومیٹر کے طویل فاصلے پر کیا گیا اور یہ راستہ نہایت غیر ہموار اور مشکل ثابت ہوا تھا۔اس لڑکی کے بھائی صالح الحوام کا کہنا تھا کہ اس کے لاپتہ ہونے کے بعد ہماری حالت غیر ہوگئی تھی، ہمیں وہ زندہ اور مردہ دونوں حالت میں چاہیے تھے۔“ ذرائع کے مطابق وادی ہیرہ میں وارننگ کے باوجود وہ بچی اپنے خاندان سمیت اس علاقے میں گئی جہاں وہ سیلفی لیتے ہوئے اپنی والدہ کی آنکھوں کے سامنے سیلاب کے پانی میں بہہ گئی۔ واقعے کے بعد لڑکی کو تلاش کرنے کی کوششوں کافی عرصہ سے جاری تھیں۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
100%
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

دلچسپ و عجیب

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved