ایک لاکھ چھریوں اور چاقوؤں سے بنا مجسمہ
  12  اپریل‬‮  2017     |     دلچسپ و عجیب

لندن(روزنامہ اوصاف) برطانیہ میں چاقو اور چھریوں سے ہونے والے جرائم کا شعور اجاگر کرنے کے لیے مقامی فنکار نے ایک لاکھ چھریوں اور چاقوؤں سے مجسمہ بنا ڈالا جس کی لمبائی 24 فٹ ہے۔برطانوی فن کار ایلفے بریڈلے نے انتھک محنت سے یہ شاہکار بنایا ہے اور اس پر لگے تیزدھار آلات متعدد بار پولیس نے ضبط کیے ہیں۔ فنکار کو اس شاہکار کو بنانے کے لیے درست مقام پر چھریاں لگانے میں 2 سال کا عرصہ لگا ہے جس میں پولیس نے بھی اس کی مدد کی اور برطانیہ کے 41 تھانوں نے مجرموں سے ضبط کیے جانے والے آلہ واردات فراہم کیے گئے جن کی مدد سے مجسمہ بنایا گیا۔مجسمہ برٹش آئرن ورکس سینٹر میں تیار کیا گیا ہے جس کے سربراہ کا کہنا ہےکہ برطانوی سڑکوں پر تیزدھار آلات سے وارداتیں بڑھتی جارہی ہیں اور اس پر بنی ایک ڈاکیومینٹری کے بعد ہی یہ مجسمہ بنانے کا فیصلہ کیا گیا جس کے لیے پولیس نے اپنے مال خانے اور نائف بینکس چھریاں اور چاقو فراہم کیے ہیں۔ بعض پولیس اسٹیشنوں نے تیزدھار آلات فراہم کرنے سے انکار کردیا تھا جس کے بعد کمپنی نے احتجاجاً اس پروجیکٹ پر کام بند کردیا تھا تاہم بڑی کوششوں سے اب یہ مکمل ہوگیا ہے۔مجسمے کے تخلیق کار کے مطابق یہ بہت مشکل کام تھا اور بڑی تعداد میں چھریاں، چاقو اور تیزدھارے آلات کو یہاں لایا گیا تھا۔اس مجسمے پر عوامی تنقید بھی کی گئی اور اس کے خلاف فیس بک پر تشہیری مہم بھی چلائی گئی تھی لیکن اب پورے برطانیہ میں اس کی نمائش جاری ہے اور آخر میں اسے لندن کے مشہور ٹریفلگر اسکوائر پر ایستادہ کیا جائے گا۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

دلچسپ و عجیب

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved