میڈیکل طالبہ کے ساتھ جموں کالج میں زیادتی، (گیلانی ) برہم
  9  جنوری‬‮  2017     |      کشمیر
سرینگر، جموں(آئی این پی) حریت کانفرنس (گیلانی)نے جموں کے میڈیکل کالج میں زیرِ تعلیم لداخ کی ایک طالبہ کے ساتھ ہوئی زیادتی کی پرزور الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہاں کی خاتون وزیر اعلیٰ کا یہ کہنا کہ ’’یہاں پر خواتین محفوظ ہیں‘‘ ایک سراب اور دھوکے کے سوا کچھ نہیں ہے جو خواتین کو اسکوٹی موٹر سائیکل دینے کے ڈراموں کے ذریعے عام لوگوں کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کی سازشیں کرتی رہتی ہے۔ گزشتہ روز ایک بیان میں حریت نے کہا کہ دوردراز سے آئی ہوئی ان معصوم طالبات کو جنسی تشدد کا نشانہ بناکر درندگی اور شیطانیت کا کھلا مظاہرہ کیا جاتا ہے اور حکومت اور انتظامیہ گونگے بہروں کی طرح خاموش تماشائی بنی ہوئی ہے۔ حریت نے کہا کہ حق وانصاف کی آواز بلند کرنے والوں کو سرکار کی ’’چابک دست اور فعال‘‘ پولیس قبروں سے بھی ڈھونڈ نکال کر زندانوں میں ڈال دیتی ہے، جبکہ ایسے اخلاق سوز اور حیا سوز جرائم میں ملوث افراد کو کھلی چھوٹ دی جاتی ہے کہ وہ ایسی گھناؤنی حرکتوں سے معاشرے کو غلیظ کریں۔

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 

رپورٹر   :  


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





 انٹر نیٹ کی دنیا میں سب سے زیادہ پڑھے جانے والے مضا مینں
loading...


آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

کشمیر

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved