228ملازمین کی فراغت، متاثرہ ملازمین کااحتجاج نویں روز میں داخل
  9  جنوری‬‮  2017     |      کشمیر
مظفرآباد(آئی این پی)محکمہ ٹیوٹا کے سیکل سینٹرز کی بندش اور 228ملازمین کی فراغت کے خلاف متاثرہ ملازمین کا احتجاج نویں روز میں داخل ہو گیا ۔پیر کے روز مرد و خواتین کی بڑی تعداد نے احتجاجی دھرنے میں شرکت کی اور اپنے مطالبات کے حق میں نعرہ بازی کرتے رہے ۔مختلف سیاسی وسماجی ،مذہبی ،ملازمین تنظیمیوں ،وکلاء،صحافیوں کا احتجاجی ملازمین کے ساتھ اظہار یکجہتی ۔وزیر اعظم آزادکشمیر کے اعلان کے باوجود ملازمین کو نارمل پر لانے اور ان کے مطالبات سنننے کوئی حکومتی نمائندہ احتجاجی ملازمین کے پاس نہ آسکا۔تفصیلات کے مطابق پیر کے روز بھی محکمہ ٹیوٹا کے زیر اہتمام چلنے والے سو سیکلز سینٹرز کے 228ملازمین کی فراغت کے خلاف متاثرہ ملازمین کا احتجاج جاری رہا ۔مرد و خواتین ملازمین کی بڑی تعداد مرکزی ایوان صحافت کے باہر احتجاجی دھرنے میں موجود رہی اور اپنے مطالبات کے حق میں نعرہ بازی کرتے رہے ۔اس موقع پر مختلف مکبتہ فکر سے تعلق رکھنے والوں نے اظہار یکجہتی کیا ۔ملازمین سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا کہ وزیر اعظم کے اعلان کے باوجود ہمیں مستقل کرنے اور سینٹرز کو بحال رکھنے کے حوالے سے محکمہ کی جانب سے کوئی تحریری پیش رفت نہیں ہوئی اور نہ ہی آج تک کوئیء حکومتی ذمہ دار ہمارے مطالبات سننے آیا ۔انہوں نے وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر خان ،چیف سیکرٹری سمیت ذمہ داران سے فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے ۔

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 



 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

کشمیر

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved