پولیس سے انصاف نہ ملنے پر بوڑھا شخص صحافیوں کے پاس پہنچ گیا
  10  جنوری‬‮  2017     |      کشمیر

میرپور(نامہ نگار) لالچی بھتیجوں کے ظلموں کا ستایاضعیف العمر شخص پولیس سے بھی انصاف نہ ملنے پر صحافیوں کے پاس پہنچ گیا،زمین مسجد کیلئے وقف کرنا جرم بن گیا ،جس پر بھتیجے جان کے دشمن بن چکے ہیں، عمر 100سال سے زائد ہو چکی ہے بھتیجیوں کے مظالم برداشت نہیں کر سکتا، پولیس تھانہ منگلا میں داد رسی کیلئے جاجا کر تھک چکا ہوں مگر کہیں سے انصاف نہیں مل رہا،آئی جی آزادکشمیر، ڈی آئی جی، ایس ایس پی مجھے انصاف فراہمی اور تحفظ فراہم کریں اور ظالم بھیتجوں کے خلاف کارروائی کی جائے ،صاحب چک کے رہائشی ضعیف العمر شخص سوداگر ولد منگتا کی دھائی،تفصیلات کے مطابق سوداگر ولد منگتا قوم جٹ ساکن صاحب چک ڈاکخانہ منگلا نے اپنے ساتھ ہونے والے ظلموں کی داستان سناتے ہوئے کہا ہے کہ میرے چھ بھتیجے مجھے مارتے پیٹتے ہیں مجھ سے میری جمع پونجی بھی چھین لی ہے بڑھاپے میں میرا کوئی آسرا نہیں ہے مجھے تحفظ اور انصاف فراہم کیا جائے میں نے اپنی زمین جو ایک کنال 11مرلے ہے مسجد بنانے کیلئے وقف کی تو میرے بھتیجے میری ہی جان کے دشمن بن گئے ہیں رمضان نامی میرے بھتیجے مجھ پر بہت ظلم کرتے ہیں میں بڑھاپے کی وجہ سے انتہائی کمزور اور لاغر ہو چکا ہوں میں ان کا ظلم نہیں سہہ سکتا مسجد کیلئے جگہ مختص کرنا میرا جرم بن گیا ہے میری آئی جی آزادکشمیر، ڈی آئی جی، ایس ایس پی میرپور سے پر زور اپیل ہے کہ مجھے ان ظالموں سے بچایا جائے اور تحفظ فراہم کیاجائے ۔انہوں نے بتایا کہ پولیس بھی میرے ساتھ تعاون نہیں کرتی بڑھاپے میں تھانے کے چکر کاٹ کاٹ کر تھانہ منگلا کے صاحب کبھی ملتے ہی نہیں اگر مل جائیں تو بات تک سننا گوارہ نہیں کرتے اگر پولیس تھانہ کچہریوں سے انصاف نہ ملے تو انسان کہاں جائے ۔انہوں نے مزید بتایا کہ میری جگہ میرے بھتیجوں نے زبردستی ہتھیا لی ہے میری زندگی اجیرن بنا دی گئی ہے مجھے انصاف اور تحفظ فراہم کیا جائے


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 
رپورٹر   :  


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

کشمیر

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved