آزاد کشمیر کی سیاسی جماعتوں اور حریت قیادت کو اعتماد میں لے کر موجودہ حالات ترتیب دیں گے، فاروق حیدر خان
  10  جنوری‬‮  2017     |      کشمیر
مظفرآباد (وقائع نگار)وزیراعظم آزادکشمیر راجہ محمد فاروق حیدر خان نے کہا ہے کہ خطہ کے تیزی سے بدلتے سیاسی اور اقتصادی حالات کے پیش نظر آزادکشمیر کی تمام سیاسی جماعتوں اور حریت قیادت کو اعتماد میں لے کر موجودہ حالات سے ہم آہنگ لائحہ عمل ترتیب دیں گے تاکہ جدوجہد آزادی کو منطقی انجام تک پہنچایا جاسکے اس سلسلہ میں تمام سیاسی ،مذہبی جماعتوں اور حریت قیادت کو اعتماد میں رلے کر ان سے مشاورت کی جائے گی جنوبی ایشیاء میں اقتصادی حالات تیزی سے بدل رہے ہیں اور ان حالات کا اثر تحریک آزادی کشمیر پر بھی پڑے گا نئے حالات کو مد نظر رکھ کر جدوجہد آزادی کے لیئے مشترکہ حکمت عملی طے کی جانا وقت کی ضرورت ہے حکومت کو بدلتے حالات کا ادراک ہے آزاد کشمیر میں میرٹ کی بالادستی ،گڈ گورننس کے نفاذ اور قانون و انصاف کی بالادستی کے لیئے حکومت نے ٹھوس اقدامات اٹھائے ہیں میرٹ ،گڈ گورننس اور قانون و انصاف کے لیئے مزید سخت اور تلخ فیصلوں سے بھی گریز نہیں کیا جائے گا حکومت نے جماعتی سیاست سے بالا تر ہو کر عوام اور ریاست کے مفاد میں تلخ اور مشکل فیصلے کیئے ہیں جن کے ثمرات جلد سامنے آنا شروع ہو جائیں گے وہ یہاں وزیراعظم ہاؤس میں وزراء ،ممبران اسمبلی ،سیاسی جماعتوں کے زعماء اور لیگی کارکنان سے گفتگو کر رہے تھے ،ان کا کہنا تھا کہ تحریک آزادی کشمیر ،آزاد خطہ کی تعمیر و ترقی اور گڈ گورننس کو حکومتی ترجیحات میں سرفہرست رکھا گیاہے اور تینوں ترجیحات پر سنجیدگی کے ساتھ کام کیا جا رہا ہے مقبوضہ کشمیر میں جاری عوامی مزاحمتی تحریک نے دنیا کو اپنی طرف متوجہ کیا ہے اس تحریک کے دوران کشمیریوں نے بے پناہ قربانیاں دیں اور عزم و ہمت کا بے مثال مظاہرہ کر کے بھارت اور اس کی قابض افواج کو پسپائی پر مجبور کر دیا ہے انہو ں نے کہا کہ آج جنوبی ایشیاء کے سیاسی و اقتصادی حالات تیزی سے بدل رہے ہیں اور جنوبی ایشیاء کی نئی تاریخ بننے جا رہی ہے ایسے حالات میں کشمیری قیادت کو مل بیٹھ کر جدوجہد آزادی کی کامیابی کے لیئے ایک مشترکہ اور متفقہ حکمت عملی اختیار کرنا ہو گی اور حالات کا ادراک کرتے ہوئے مستقبل کے چیلنجز کو مد نظر رکھنا ہو گا اس مقصد کے لیئے آزادکشمیر میں آل پارٹیز کانفرنس بلائے جانے پر غور کر رہے ہیں جس میں حریت کانفرنس کو بھی بلایا جائے گا انہوں نے کہا کہ گڈ گورننس کا فروغ حکومت کی اولین ترجیحات میں شامل ہے گڈگورننس پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا گڈ گورننس کے فروغ کے لیئے حکومت تمام وسائل بروئے کار لا رہی ہے اس حوالے سے تمام ذمہ داران کو سخت ہدایات جاری کی گئی ہیں گڈ گورننس کے فروغ میں کوئی رکاوٹ برداشت نہیں کی جائے گی وزیراعظم راجہ فاروق حیدر نے کہا کہ میرٹ کی بحالی اور بالادستی کے لیئے حکومت جاندار اقدامات اٹھا رہی ہے آزادکشمیر کے سب سے بڑے اور سب سے اہم ترین محکمہ تعلیم میں جملہ غیر جریدہ آسامیوں پر این ٹی ایس اور جریدہ آسامیوں پر پبلک سروس کمیشن کے ذریعے تقرریاں کی جائیں گی حکومت کے لیئے یہ مشکل فیصلہ تھا لیکن معیار تعلیم کی بہتری اور محکمہ تعلیم سے سیاست کے خاتمے کے لیئے یہ فیصلہ کیا اور اس پر سو فیصد عمل درآمد کروائیں گے حکومت نے تہیہ کر رکھا ہے کہ سرکاری اداروں میں سیاسی کلچر کے خاتمے کے لیئے مرحلہ وار بنیادوں پر جاندار اقدامات اٹھائے جائیں گے انہوں نے کہا کہ آزاد خطہ کی تعمیر و ترقی اور عوام کو بنیادی سہولیات کی فراہمی کے لیئے وزیراعظم پاکستان میاں محمد نواز شریف نے بڑے ترقیاتی پیکیج کی یقین دہانی کرائی ہے جس پر عمل درآمد سے خطہ کی تقدیر بدل جائے گی مسلم لیگ ن کی حکومت اعلانات پر نہیں عمل پر یقین رکھتی ہے ۔

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 

رپورٹر   :  


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





 انٹر نیٹ کی دنیا میں سب سے زیادہ پڑھے جانے والے مضا مینں
loading...


آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

کشمیر

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved