گورنمنٹ پرائمری سکول رواٹہ کی بندش کیخلاف طلباء اور والدین کا احتجاج
  10  جنوری‬‮  2017     |      کشمیر
آٹھ مقام (آئی این پی) گورنمنٹ پرائمری سکول رواٹہ کی بندش کے خلاف طلباء اور والدین کا احتجاج ، ادارہ کی بحالی کا مطالبہ۔ حکومت ہوش کے ناخن لے مقررین کا خطاب۔ ضلعی ہیڈکواٹر آٹھمقام کے نواحی علاقہ رواٹہ کے عوام نے ایوان صحافت چنار پریس کلب آٹھمقام کے سامنے احتجاجی دھرنا دیا ہے۔ مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے عمائدین محمد الطاف، غلام محی الدین، صادق شیخ، اقبال بٹ، شیر عالم،بشیربٹ،حبیب اللہ رفیع میر جاوید میر، آزادشیخ، ممتاز بٹ نے کہا ہے کہ ان کے پولنگ اسٹیشن سے شاہ غلام قادر کو249 ووٹ دئیے تھے لیکن موصوف نے سیاسی انتقام لیتے ہوئے40 سال پرانے سکول کو ختم کرکے سینکڑوں طلباء طلبات کا مستقبل تاریک کردیا ہے۔ مسیحائی کے دعویدار شاہ غلام قادر عوام کے لئے مصیبت بن چکا ہے ۔ موصوف نے اقتدار میں لاتے ہی عوام دشمنی کے ریکارڈ توڑ دئیے ہیں۔راوٹہ کا سکول چالیس سال قبل سردار عبدالقیوم خان نے دیا تھا لیکن شاہ غلام قادر نے اپ گریڈ کرنے کے بجائے ختم کر کے شنگاں کے مقام پر غیر موضوع جگہ پر سکول منتقل کر دیا ہے۔ چھوٹے بچے روزانہ دس کلو میٹر کا سفر پیدل کیسے طے کر سکتے ہیں ۔ سینکڑوں طلبا طلبات ادارہ کی بندش کی وجہ سے سکول چھوڑنے پر مجبور ہیں ۔ والدین کا معاشی نقصان کے ساتھ طلباء کا قیمتی مستقبل تاریک کر دیا گیا ہے۔ جس پر علاقہ کے عوام سراپا احتجاج ہیں۔ چیف سیکرٹری آزاد کشمیر ، جی او سی مری مداخلت کے ہوئے قدیم ادارہ کی بحالی کے لئے اپنا کردار ادا کریں۔ عوام اگلے قدم کے طور پر دارلحکومت کی لانگ مارچ کریں گے۔

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 



 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

کشمیر

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved