گلگت بلتستان کو کسی بھی صورت پاکستان کا پانچواں صوبہ نہیں بننے دینگے ، مرزا شفیق جرال
  19  مارچ‬‮  2017     |      کشمیر

اسلام گڑھ(روزنامہ اوصاف)آل جموں وکشمیر مسلم کانفرنس کے قائمقام صدر سابق وزیر حکومت مرزا شفیق جرال نے کہا ہے کہ وزیراعظم آزادکشمیر راجہ فاروق حیدر خان کو بیانات دینے سے قبل سو بار سوچنا چاہیے ان کا حالیہ بیان کشمیریوں کے زخموں پر نمک پاشی کے مترادف ہے گلگت بلتستان کو کسی بھی صورت پاکستان کا پانچواں صوبہ نہیں بننے دینگے اگر پاکستان حکومت نے اس معاملہ پر کسی بھی قسم کی کوئی غیر آئینی اور غیر قانونی اقدام کیا تو اس کی بھرپور طریقہ سے مذمت کی جائے گی وہیں اس مسئلہ پر بھرپورطریقہ سے احتجاج بھی ریکارڈ کروایا جائیگا کشمیر کا 84ہزار مربع میل کا رقبہ متنازعہ علاقہ ہے جب تک اس مسئلہ کا حل اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل نہیں ہو جاتا اس وقت تک اس مسئلہ کے حوالہ سے غیر آئینی اقدام کرنے کی اجازت نہیں دے سکتے ۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ مرزا محمد شفیق جرال نے مزید کہا کہ وزیراعظم راجہ فاروق حیدر خان نے گلگت بلتستان کے حوالہ سے جس طرح کا بیان دیا ہے اس سے یہ محسوس ہوتا ہے کہ انہوں نے بھی پاکستان حکومت کی تائید و حمایت کی ہے لیکن کشمیری عوام کسی بھی صورت اس غیر آئینی اقدام کو پایا تکمیل تک نہیں پہنچنے دیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت پاکستان گلگت بلتستان کو پاکستان کا پانچواں صوبہ بنا کر مسئلہ کشمیر کی اتھارٹی کو چیلنج کر رہی ہے جس سے مقبوضہ کشمیر میں جاری تحریک آزادی کشمیر کو شدید نوعیت کے خدشات پیدا ہو جائیں گے اور مقبوضہ کشمیر کے عوام جو گزشتہ ستر سالوں سے اپنی آزادی اور پاکستان کی خاطر جانوں کا نذرانہ پیش کر رہے ہیں ان کی روحوں کو مجروح کیاجائیگا ۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 
رپورٹر   :  


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

کشمیر

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved