صحافیوں پر تشددچوتھے ستون پر حملہ ہے، نعیم احمد خان
  20  مارچ‬‮  2017     |      کشمیر
مظفرآباد(روزنامہ اوصاف) حریت لیڈر اور جموں کشمیر نیشنل فرنٹ کے چیئر مین نعیم احمد خان نے وردی پوش اہلکاروں کے حیدر پورہ میں صحافیوں پر حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ جن پولیس اہلکاروں نے صحافیوں پر حملے کی مذموم حرکت کی وہ کسی خاص فرقے کی نہیں بلکہ باقی سبھی پولیس اہلکاروں کی طرح اس سٹیٹ کی نمائندگی کرتے ہیں جو متنازعہ خطے کے اندر قتل و غارتگری،گمشدگیوں،عصمت دری اور ماورائے عدالت قتلوں میں ملوث ہے۔صحافی توصیف مصطفے،مبشر خان اور دیگر پیشہ وروں کو جسمانی طور نقصان پہنچانے کی کوشش اور انہیں اپنی پیشہ ورانہ فرائض انجام دینے سے روکنے کو جمہوریت کے چوتھے ستون پر براہ راست حملہ قرار دیتے ہوئے نعیم خان کا کہنا تھا کہ وہ سٹیٹ جس کی پولیس اور دیگر فورسز سڑکوں پر نمائندگی کرتی ہے صحافت کی آزادی پر قدغن لگانے میں ملوث ہورہی ہے۔صحافیوں پر حملے کو ریاستی دہشت گردی کی بد ترین مثال قرار دیتے ہوئے،نعیم خان نے مزید کہا کہ ایسے واقعات سے یہ حقیقت مزید آشکارا ہوجاتی ہے کہ جموں کشمیر کا متنازعہ خطہ عملی طور پر ایک پولیس سٹیٹ میں تبدیل کی گئی ہے جہاں وردی پوش اہلکار اپنی مرضی کے مطابق کوئی بھی حرکت سکتے ہیں۔نعیم خان نے صحافیوں پر براہ راست حملے میں ملوث وردی پوش اہلکاروں کیخلاف سنگین کارروائی پر زور دیتے ہوئے کہا کہ صحافیوں کو اپنے پیشہ ورانہ فرائض کی انجام دہی سے روکنے کیلئے مہذب دنیا کے اندر کوئی جگہ نہیں ہے جس کا کشمیری ایک حصہ ہیں۔انہوں نے کشمیر کی صحافی برادری سے یکجہتی کا اظہار کرتے ہوئے مزید کہا کہ وہ انتہائی مشکل حالات کے اندر قابل قدر کام انجام دیتے آرہے ہیں۔

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 

رپورٹر   :  


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

کشمیر

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved