سرینگر، پلوامہ میں طلبہ پر بھارتی فورسز کے تشدد کے خلاف احتجاجی مظاہرے
  17  اپریل‬‮  2017     |      کشمیر

سرینگر(اے پی پی) مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی فوجیوں کی طرف سے ہفتہ کے روز پلوامہ ڈگری کالج میں طلبہ بدترین تشدد کے خلاف مقبوضہ علاقے کے تقریبا تمام تعلیمی اداروں میں احتجاجی مظاہرے کئے گئے ۔ مظاہرین پر بھارتی پولیس کے تشدد سے ایک صحافی اور متعدد طالب علم زخمی ہو گئے۔ کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق مظاہروں کی کال کشمیر یونیورسٹی سٹوڈنٹس یونین نے دی تھی۔سرینگر میں ایس پی کالج اور سرکاری ہائیر سیکنڈری سکول کے ایک ہزار سے زائد طلباء نے کالج میں جمع ہو کر مظاہرے کئے جس کے بعد مظاہرین اور طلباء کے درمیان جھڑپیں شروع ہو گئیں۔ مظاہرین نے بھارت کے خلاف اور آزادی کے حق میں نعرے بلند کئے اور ایم اے روڈ سرینگر پر مارچ کیا۔ پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے آنسو گیس کا بے دریغ استعمال کیا جس کے بعد جھڑپیں شروع ہو گئیں۔ فورسز کی کارروائی میں متعدد طالب علم زخمی ہو گئے ۔ مشتعل مظاہرین نے کئی گھنٹوں تک روڈ بلاک رکھی ۔ پلوامہ ، شوپیاں ، سوپور ، پٹن ، گاندربل اور کشمیریونیورسٹی میں بھی ڈگری کالج پلوامہ میں بھارتی فورسز کی طرف سے طلباء کی بے رحمانہ مارپیٹ کے خلاف مظاہرے کئے گئے اور پولیس اہلکاروں نے مظاہرین پر طاقت کا وحشیانہ استعمال کیا ۔ طلبہ پر تشدد کے خلاف پلوامہ قصبے میں احتجاج کرنے والے طلبہ کو منتشر کرنے کیلئے فورسز نے آنسو گیس کا وحشیانہ استعمال کیا جس کے بعد جھڑپیں شروع ہوگئیں اور علاقے میں ہڑتال کی گئی ۔ تمام دکانیں اور تجارتی مراکز بند رہے اور سڑکوں پر ٹریفک معطل رہی ۔ڈگری کالج سوپور اور بارہمولہ میں بھی ہزاروں طلباء نے احتجاج کیا ۔سوپور میں پولیس ہیڈکوارٹر انتہائی قریب ہونے کی وجہ سے پولیس نے کالج کے خارجی راستوں کی ناکہ بندی کردی جس کے بعد طلبہ نے ہیڈ کوارٹر پر پتھراؤ کیا ۔ پولیس کی طرف سے طاقت کے وحشیانہ استعمال سے متعدد طلباء زخمی ہوگئے ۔ ایک صحافی پیر زادہ وسیم بھی پولیس کی کارروائی میں زخمی ہوا۔ گورنمنٹ ڈگری کالج گاندربل کے طلبہ نے بھی کلاسوں کا بائیکاٹ کیا اور کالج میں بھارتی مظالم کے خلاف احتجاج کیا اور نعرے بلند کئے ۔ گورنمنٹ ڈگری کالج بانڈی پورہ میں طالبات سمیت طلبہ نے پلوامہ میں طلبہ پر تشدد کے خلاف مظاہرے کئے اور نعرے بلند کئے ۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 
رپورٹر   :  




آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

کشمیر

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved