رکن قانون ساز اسمبلی پیر سیدعلی رضا بخاری کی طرف سے آزاد کشمیر اسمبلی میں ختم نبوت بل پیش ‘عوام میں خوشی کی لہر ۔
  19  اپریل‬‮  2017     |      کشمیر

مظفرآباد(ویب ڈیسک) ممبر آزاد جموں وکشمیر قانون ساز اسمبلی و سجادہ نشین دربار عالیہ بساہاں شریف پیر سید علی رضا بخاری نے آزاد کشمیر اسمبلی میں تحفظ ختم نبوت بل جمع کروادیا۔ جس پر آزاد کشمیر بھر میں عاشقان رسول ؐ میں خوشی کی لہر دوڑ گئی۔ممبر اسمبلی پیر سید علی رضا بخاری نے گزشتہ روز سپیکر اسمبلی آزاد جموں شاہ غلام قادر کو ختم نبوت بل پیش کیا ۔ اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے سید علی رضا بخاری نے کہا کہ آزاد کشمیر اسمبلی نے 1973ء میں ختم نبوت قرارداد منظور کی تھی جس کے بعد 1974میں پاکستان میں تو ختم نبوت بل پاس کیا گیا مگر آزاد کشمیرمیں اس پر مزید قانون سازی نہ ہو سکی اور اب آزاد کشمیر اسمبلی میں ختم نبوت بل ایوان میں قانون سازی کیلئے جمع کروا دیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بل کی تیاری میں وزیر قانون راجہ نثار احمد خان اور وزارت قانون کے سٹاف نے ان کی بھرپور معاونت کی جس پر وہ مبارکباد کے مستحق ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ختم نبوت پر قانون سازی وقت کی اہم ضرورت تھی جس کو اللہ تعالیٰ کے فضل و کرم سے مسلم لیگ ن کی حکومت نے پورا کردیا ہے ۔ انہوں نے وزیر اعظم آزاد کشمیر راجہ محمد فاروق حید رخان کا بھی خاص طور پر شکریہ ادا کیا جنہوں نے ہر مرحلے پر ان کی رہنمائی کی اور ریاست کے اندر انتہائی اہم دینی معاملے پر قانون سازی کی کمی کو پورا کیا جار ہا ہے ۔انہوں نے کہا کہ ریاست جموں وکشمیر میں صوفیاء و علماء نے اسلام کی روشنی پہنچائی اور پر امن و محبت کا پیغام پھیلایا ۔انہوں نے کہاکہ حب رسول ؐ ہمارے ایمان کا حصہ ہے اور ہم عشق رسول اور ختم نبوت کے تحفظ کیلئے اپنی جانیں تک نچھاور کرنے کو تیار ہیں ۔ انہوں نے آزاد کشمیر بھر کے عوام کو مبارک دیتے ہوئے کہا کہ آج آزاد کشمیر کی پارلیمانی و قانون سازی کی تاریخ میں اہم دن ہے جب ہم نے اسمبلی میں ختم نبوت بل قانون سازی کیلئے جمع کروایا ہے ۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
100%
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

کشمیر

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved