مظفرآباد،آزادکشمیر کا سب سے بڑا سرکاری محکمہ تعلیم تباہی کی حدیں چھونے لگا
  13  ستمبر‬‮  2017     |      کشمیر

مظفرآباد(آئی این پی)محکمہ تعلیم آزادکشمیر دوسرکاری ملازمین کے ہاتھوں یرغمال ،آزادکشمیر کا سب سے بڑا سرکاری محکمہ تباہی کی حدیں چھونے لگا ،محکمہ تعلیم کالجز اور سکولز میں من پسند افراد کی تعیناتیوں اور تبادلوں پر وزیراعظم آزادکشمیر خاموش تباہی ،آزادکشمیر بھر کے عوام میں تشویش کی لہر دوڑ گئی ،تفصیلات کے مطابق موجودہ حکومت قائم ہوتے ہی بیرسٹر افتخار گیلانی کو وزارت تعلیم کا قلم دان سونپا گیا جنھوں نے کاشف اور عزیز نامی سرکاری ملازمین اپنے ساتھ تعینات کیے جنھوں نے محکمہ تعلیم کو مکمل یرغمال بنا لیا ہے ،دونوں محکموں کے افسران بھیگی بلی بن گئے ،مبینہ طور پر کمیشن وصول کر کے روزانہ من پسند افراد کی تقرریاں اور تبادلے دھڑلے سے جاری ہیں جس پر وزیر تعلیم نے آنکھیں بند کر رکھی ہیں جب کہ وزیراعظم بھی اس صورت حال پر خاموش ہیں ،اس وقت پبلک سروس کمیشن پاس کرنے والوں کی بھی

تعیناتیاں نہیں ہو سکیں ،جن سے کمیشن وصولی کے تقاضے کا انکشاف ہوا ہے ،اسی طرح اعلیٰ اسامیوں پر سنیارٹی کے مغائر تعیناتیاں بھی کی جا رہی ہیں ،وزارت تعلیم میں تعینات ان دونوں سرکاری ملازمین کی بے جا مداخلت پر مسلم لیگ (ن) کے کارکنان اور افسران متعدد بار احتجاج کر چکے ہیں مگر ابھی تک اس کا کوئی نوٹس نہیں لیا گیا ،خیال ظاہر کیا جا رہا ہے کہ پانچ سال میں ریاست کا سب سے بڑا محکمہ تباہ و برباد ہو جائے گا،محکمہ تعلیم کی اس تباہی پر ریاست کے عوام شدید پریشان ہیں جب کہ حکومتی اراکین اسمبلی بھی اس تباہی پر خاموش احتجاج پر ہیں ۔ریاست کے شہریوں نے وزیراعظم راجا فاروق حیدر سے فوری مداخلت کرتے ہوئے اصلاح و احوال کا مطالبہ کیا ہے ۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

کشمیر

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved