تین دن کا الٹی میٹم! وہی ہوا جس کا خدشہ تھا ،شہری حکومت کیخلاف نکل آئے ‎
  11  جنوری‬‮  2017     |     گلگت بلتستان
سکردو(اوصاف نیوز )خون جما دینے والی شدیدسردی میں بجلی کی طویل لوڈشیڈنگ نے سکردوکے شہریوں کا میٹر گھما دیا،تاجروں نے شٹرڈاون ہڑتال کر دی شہر کے کئی مقامات سے احتجاجی ریلیاں،حکومت اور محکمہ برقیات کو تین دن کا الٹی میٹم وفاقی و صوبائی حکوت، واپڈا اور محکمہ برقیات کے خلاف شدید نعرہ بازی کی گئی۔سکردو شہر اور مضافاتی علاقوں میں جنوری کی خون جما دینی والی شدید سردی میں طویل دورانیہ کی لوڈشیڈینگ کے باعث تاجرتنظیمیں اور عوام سرپا احتجاج بن گئے ہیں بدھ کے روز مرکزی انجمن تاجران کی کال پر سکردو شیر کے تمام بڑے کاروبای مراکز میں شٹر ڈاون ہڑتال کی گئی جبکہ علمدار چوک ، شیر علی چوک اور بے نظیر چوک سے یاد گار چوک تک احتجاجی ریلیاں نکالی گئی جس میں تاجر براداری کے علاوہ مختلف سیاسی جماعتوں کے مقامی رہنماوں سول سوسائٹی کے اراکین اور عوام کی بڑی تعداد نے شرکت کی اسی سلسلے میں بھٹوبازار چوک پر بھی احتجاجی مظاہرہ کیا گیا،یاد گار چوک پر احتجاجی مظاہرین سے خطاب کرتے ہوے مرکزی انجمن تاجران سکردو کے صدر غلام حسین اطہر،پیپلز پارٹی کے سینئر رہنما عبداللہ حیدری، سول سوسائٹی کے رہنما نجف علی اور تحریک انصاف کے رہنما نجف بھٹو سمیت دیگر مقررین نے کہا کہ وزیر اعظم پاکستان ہر روز ملک سے لوڈشیڈینگ ختم کرنے کے بے بنیاد دعوے کرکے عوام کو بے وقوف بنارہے ہیں سکردو شہر اور مضافاتی علاقوں میں اس خون جما دینے والی شدید ترین سردی میں 22 گھنٹے روزانہ لوڈشیڈینگ کی جارہی ہے جو ناقابل برداشت ہے مقررین نے کہا کہ عوام اس شدیدترین سردی میں اعصاب شکن لوڈشیڈینگ کے عذاب میں مبتلا ہے جبکہ یہاں کے منتخب عوامی نمائندوں اور انتظامیہ ٹس سے مس نہیں ہو رہی ہے کوئی پوچھنے والا نہیں ہے اس موقع پر مرکزی انجمن تاجران کے صدر نے حکومت کو محکمہ برقیات کو تین دن کا الٹی میٹم دییت ہوے کہا کہ تین روز کے اندر بجلی کی بجلی کی فراہمی کا انتظام نہ کیا گیا تو بلتستان کے تمام اضلاع میں غیر معینہ مدت کے لیے شٹرڈاون ہڑتال اور پہہ جام کیا جاے گا بجلی کی طویل لوڈ شیڈینگ سے شہر میں نظام زندگی مکمل مفلوج ہے کاروبار تباہ ہوگیا ہے تاجربرادار دیوالیہ ہورہی ہے ہم مزید ظلم برداشت نہیں کرسکتے،اس موقع پر احتجاجی مظاہرین نے وفاقی و صوبائی حکومت،واپڈا محکمہ برقیات اور ضلعی انتظامیہ کے خلاف شدید نعرہ بازی بھی کی۔‎

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 

رپورٹر   :  


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





 انٹر نیٹ کی دنیا میں سب سے زیادہ پڑھے جانے والے مضا مینں
loading...

  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

اہم خبریں

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved