پاک فوج نے نواز حکومت کا پول کھول دیا۔۔۔ عالمی عدالت سے کلبھوشن کا فیصلہ آنے کے بعد آرمی چیف نے خاموشی توڑ دی
  18  مئی‬‮  2017     |     اہم خبریں
راولپنڈی (روز نامہ اوصاف ) جی ایچ کیو میں سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا کہ یہ سب کا ملک ہے اور یہ ملک ہم سب کی ذمہ داری ہے۔ سیمینار کے دوران ماہر تعلیم خالد حمید کے سوال کے جواب میں آرمی چیف نے کہا کہ کلبھوشن یادیو کے لیے وکیل ہم نے بلایا تھا۔ انہوں نے اپنے خطاب میں بتایا کہ جب میں نے پہلا فیصلہ کیا تو میرے بیٹے نے کہا کہ یہ پاپولر فیصلہ ہے لیکن غلط ہے، اور جب دوسرا فیصلہ کیا تو اس فیصلے پرمیرے بیٹے نے کہا کہ اگرچہ یہ فیصلہ پاپولر نہیں لیکن درست فیصلہ ہے۔آرمی چیف نے کہا کہ آج کی نوجوان نسل اسٹریٹ فارورڈ ہے۔ جب تک ہماری نوجوان نسل میں جذبہ ہے تب تک پاکستان کو کوئی شکست نہیں دے سکتا۔30ہزار اہلکار دہشتگردی کے خلاف جنگ میں اہنی جان قربان کر چکے ہیں۔ ملک میں جہاں مسئلہ ہوتا ہے فوج کو بلایا جاتا ہے۔ میرے جوانوں کو بھی آرام نہیں ملتا۔ ہر بار ایک محاذ سے دوسرے محاذ پر جاتے ہیں۔ عوام کو چاہئیے کہ وہ اپنی فوج، پولیس اور بیوروکریسی کے ساتھ کھڑے ہوں۔انہوں نے کہا کہ یہ ملک ہم سب کی ذمہ داری ہے۔ اس ملک میں فوج اکیلے کچھ نہیں کر سکتی ۔ ساری ذمہ داری پاک آرمی پر ڈالنے سے ملک آگے نہیں جاتا ۔ آرمی چیف نے انتہا پسندی مسترد کرنے سے متعلق سیمینار کے منتظمین کو مبارکباد بھی پیش کی اور کہا کہ میں ملکی سلامتی کے لیے میڈیا اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے کردار پر ان کا شکر گزار ہوں۔

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
84%
ٹھیک ہے
6%
کوئی رائے نہیں
3%
پسند ںہیں آئی
6%




  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

اہم خبریں

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved