نواز شریف نااہلی کے بعد ہوش وہواس کھو بیٹھے ہیں،تنویراحمد
  13  اگست‬‮  2017     |     یورپ

لندن( پ ر) پاکستان رابطہ کونسل لندن کے چیئرمین تنویر احمد سعید نے کہا ہے کہ میاں نواز شریف نا اہل ہونے کے بعد ہوش وہواس کھو بیٹھے ہیں لاہور میں انہوں نے بڑا ایک بھونڈا مذاق کیا ہے اگر وہ بحال ہوجائیں توعوام کو سستا انصاف ملے نظام کو وائرس ہوگیا ہے نظام کو بدلوں گا آئین کو تبدیل کرونگا لوگ ہنس رہے ہیں یہ کام چار سال میں کیوں نہیں کیا ۔اس سے پہلے نیب میں ان کے خلاف سپریم کورٹ کا والیم 10 کھلے گا اور جیل میں ہونگے تو یہ وعدے کون پورے کرے گا جو پچھلے تین ادواروں میںاقتدار میں رہتے ہوئے پورے نہیں کیے گے۔ انہوں نے کہا کہ وہ آئین میں ترمیم کرکے62/63 کو ختم کریں گے پیپلز پارٹی سے بھی حمایت مانگ رہے ہیں اگر انہوں نے ایسے کیا تو پھر اس پر پر کرپٹ، قاتل، زانی ، بدمعاش اور ملک دشمن ہی راج کریں گے البتہ وہ اس سے پہلے ہی وہ اپنے انجام کو پہنچ جائیں ان کے ان ناپاک عزائم کی تکمیل نہیں ہوگی وہ خود تو کسی عدالتی فیصلے کو ماننے کو تیار نہیں لوگوں کو بیوقوف بنارئے کہ انہیں سستا انصاف دیا گائے گاآخر کار ان کا اصل عوام کے سامنے بے نقاب ہو گیا ہے کہ وہ ایسا نظام چاہتے ہیں جس سے وہ لوگوں کو غلام رکھ سکیں۔ تنویر سعید نے کہا میاں نواز شریف نے فوج اور عدلیہ کے خلاف جو زبان استعمال کی ہے وہ تاریخ کا حصہ بن گی ہے اب وہ مذید لوگوں کو کرپشن کی دولت سے خرید نہیں سکتے انہوں نے سمجھا تھا پاکستان کے عوام جی، ٹی روڈ کو بند کر دیں مگر ایسا نہیں ہو اجن کو دہاڑی کے پیسے دیے گے وہی آئے اور آخر ان کا شو ناکام ہوا عوام نے کوئی دلچسپی نہیں دکھائی اور انہیں عدالت کی طرف سے نا اہل قرار دینے کا خیر مقدم کیا۔ انہوں نے کہا کہ جن لوگوں کو یہ علم نہیں تھا کہ نواز شریف وزیر اعظم پاکستان کے تھے اور نوکری کے لیے دبئی میں آقامہ لیا ہوا تھا اورکرپشن کا پیسہ باہر نکالتے ہیں پوری دنیا کو پتہ چل گیا کہ اس نے پاکستان کے غریب عوام کو کس طرح لوٹ کر دولت باہر منتقل کر رہے ہیں۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

اہم خبریں

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved