نااہل وزیراعظم کی حمایت کرنیوالے بھی مجرم ہیں،مفتی فضل احمد
  13  اگست‬‮  2017     |     یورپ

برمنگھم(پ ر) پاکستان رابطہ کونسل کے چیئرمین اور مرکزی جماعت اہل سنت کے جنرل سکریٹری مفتی فضل احمد قادری نے کہا ہے میاں نواز شریف کو ممتاز قادری شہید کو پھانسی کی سزا دینے پر اللہ تعالیٰ کی پکڑ میں سزا ملی ہے نواز شریف نے بیشمار جرم کیے ہیں نیب میں کیس جائے گا تو مزید بہت کچھ سامنے آئے گا ماڈل ٹائون کا قتل عام میاں نواز شریف کو پھانسی کے پھندے تک لے جائے گا ملک میں ایک ایسا انقلاب آنے والا ہے جو قاتلوں چوروں اور ملک دشمنوں کو بہا کر لے جائے گا پوری قوم اس وقت عدلیہ اور فوج کے ساتھ کھڑی ہے لندن میں کرپشن کی دولت اور حکومت برطانیہ سے اس کی تحقیقات کا مطالبہ اور نواز شریف کے حواریوں کی تلاشی کا مطالبہ بھی زور پکڑ گیا ہے اور ایک نا اہل وزیر اعظم کی حمائت کرنے والے بھی برابر کے مجرم ہیں۔ انہوں نے کہا میاں نواز شریف تین بار وزیر اعظم ، وزیر اعلیٰ اور وزیر خزانہ کے عہدے پر رہے ملک اور قوم کی کیا خدمت کی ہے آج نا اہل ہونے پر انقلاب اور ووٹ کیا تقدس یاد آگیا ہے ماڈل ٹائون میں جب لاشیں گر رہی تھیں تو انہیں یہ نظر نہیں آیا کہ انسانوں کا قتل عام ہو رہا ہے جس عدلیہ کی بحالی کا وہ کریڈت لے رہے آج انہوں نے انہیں نا اہل قرا دیا ہے اور ان کی چیخیں نکل رہی ہیں 1999 میں بھی ان کے ساتھ کوئی نہیں نکلا تھا اور اب بھی جو وہ وعدے لے رہیں ان کے ساتھ کوئی کھڑا نہیں ہوگا آج سارے وزرا غائب ہیں مشکل وقت میں کرپٹ اور نا اہل لوگوں کا کوئی ساتھ نہیں دیتا۔ مفتی فضل احمد نے کہا کہ میاں نواز شریف عدلیہ اور ججزز کے خلاف جو توہین آمیز زبان استعمال کر رہے ہیں ان پر مذید کیس بن رہے ہیں اس مرتبہ کوئی سعودی عرب پناہ نہیں دے اور برطانیہ بھی ایسے کرپٹ لوگوں کو اجازت نہیں دے گا منی لانڈرنگ کا پیسہ آقاموں کے سہارے لندن منتقل ہوا ہے برطانوی قانون میں بہت بڑا جرم ہے اور نواز شریف اس میں بچ نہیں سکتے بلکہ کہیں دوسرے لوگوں کو بھی نواز شریف ڈبوئیں گے ۔ ان میں ان کے گلو بٹ بھی شامل ہیں ۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

اہم خبریں

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved