جماعت الاحرار گروپ نے پاکستان میں حملوں کی نئی لہر کا اعلان کر دیا
  15  فروری‬‮  2017     |     پاکستان

اسلام آباد(روز نامہ اوصاف) تحریک طالبان پاکستان کے جماعت الاحرار گروپ نے پاکستان میں مسلح حملوں کی نئی لہر کا اعلان کر دیا ۔ جرمن خبر رساں ادارے کے مطابق جماعت الاحرار نامی دھڑے کی جانب سے جاری کیے گئے ویڈیو بیان کے بعد پاکستان میں مسلح حملوں کا یک نیا خدشہ پیدا ہو گیا ہے۔ جماعت الاحرار کے عسکریت پسندوں نے اپنے اس آپریشن کو لال مسجد کے غازی عبدالرشید سے موسوم کیا ہے۔غازی عبد الرشید کو سابق صدر پرویز مشرف کے دور میں وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں اس مسجد کے خلاف آپریشن کے دوران ہلاک کر دیا گیا تھا۔ عسکریت پسند تنظیم کا کہنا ہے کہ ان کےمسلح حملوں کا ہدف پاکستانی فوج، پارلیمنٹ، عدلیہ، پولیس اور حکومتی خفیہ اداروں کے علاوہ کئی دیگر سرکاری اور غیر سرکاری ادارے بھی ہوں گے۔ ویڈیو بیان میں کہا گیا ہے کہ مساجد، مدارس اور عید گاہوں جیسے عوامی مقامات کو نشانہ نہیں بنایا جائے گا۔ویڈیو بیان جاری ہونے کے بعد دفاعی او دیگر تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ اس ویڈیو بیان سے اس خیال کو مزید تقویت ملتی ہے کہ ملک میں سرگرم عسکریت پسندوں کے گروپوں کی کمر تاحال نہیں ٹوٹی جس کے تحت اب ایک مرتبہ پھر دہشتگرد ملک بھر میں عسکری کارروائیاں کرنے کے لیے پر تول رہے ہیں۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

پاکستان

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved