سابق آرمی چیف نے ’’پانامہ فیصلے کے دن ‘‘ایسی بات کہہ دی کہ عوام کو نئی پریشانی میں مبتلا ہو گئی
  20  اپریل‬‮  2017     |     پاکستان
دبئی (روز نامہ اوصاف ) سابق صدر پرویز مشرف کا کہنا ہے کہ پاکستان میں تبدیلی نہیں آئی تو (ن) لیگ اور پی پی ہی اقتدار میں آئیں گے۔ ملک میں ایک مرتبہ پھر 2008 جیسی صورتحال پیدا ہوگی۔تفصیلات کے مطابق امریکی میڈیا کو دیئے گئے انٹرویو میں سابق صدر ریٹائرڈ جنرل پرویز مشرف نے کہا کہ پاکستان میں مثبت تبدیلی کیلئے تیسری پارٹی کو آنا ہوگا۔ کوئی پارٹی نہیں آئی تو ملک میں 2008 جیسی صورتحال پیدا ہوگی۔مقبوضہ کشمیر سے متعلق سوال پر پرویز مشرف نے کہا کہ مقبوضہ وادی میں نوجوان حریت کی تحریک کی قیادت کررہے ہیں۔ بھارت کی پالیسی کشمیریوں کی جدوجہد کو کچلنا اور پاکستان کو اسٹریٹجک طور پر کمزور کرنا ہے۔ بھارتی وزیر اعظم کو پاکستان سے جارحانہ رویہ بدلنا ہوگا۔مقبوضہ کشمیر سے متعلق امریکی ثالثی کے سوال پر پرویز مشرف نے کہا کہ کشمیر تنازعے میٕں امریکا کو مداخلت کرنا چاہیے۔ پرویز مشرف نے کہا کہ بھارت افغانستان میں مداخلت کر رہا ہے۔29 مسلمان ملکوں کا فوجی اتحاد پر سابق جنرل نے کہا اسلامی ممالک کا فوجی اتحاد فرقہ واریت سے بالا تر ہونا چاہیے۔ پاکستان امریکی صدر کو اپنے موقف سے آگاہ کرے اور خطے کی صورتحال سے متعلق ڈونلڈ ٹرمپ کو اعتماد میں لے۔

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
56%
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
22%
پسند ںہیں آئی
22%



 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





 انٹر نیٹ کی دنیا میں سب سے زیادہ پڑھے جانے والے مضا مینں
loading...


آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

پاکستان

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved