جے آئی ٹی رپورٹ میں 60دن بعد کیا ہوگا نواز شریف کے مستقبل کا فیصلہ ہوگیا۔۔۔!
  20  اپریل‬‮  2017     |     پاکستان

اسلام آباد (روز نامہ اوصاف)وزیراعظم بچ نکلے، سپریم کورٹ نے قطری خط مسترد کرتے ہوئے منی ٹریل معلوم کرنے کیلئے جے آئی ٹی بنانے کا حکم دے دیا۔تفصیلات کے مطابق پانامہ کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے سپریم کورٹ کے 5رکنی بنچ نے شریف فیملی کی طرف سے پیش کئے جانے والا قطری شہزادے کا خط مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ شریف خاندان کے بیرون ملک اثاثوںکی تفصیلات معلوم کرنے کیلئے ضروری ہے کہ منی ٹریل معلوم کی جائے جس کیلئے جے آئی ٹی بنانے کا حکم دیا جا رہا ہے۔ سپریم کورٹ کے 5رکنی بنچ کے پانامہ کیس فیصلے کے مطابق وزیراعظم اور ان کے صاحبزادوں کو جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہونے کا حکم دیا گیا ہے ، جے آئی ٹی میں ایف آئی اے، نیب ، سٹیٹ بینک، سکیورٹی ایکسچینج کمیشن ، آئی ایس آئی اور ایم آئی کے نمائندے شامل ہونگے۔ جے آئی ٹی ہر 15روز بعد پیشرفت سے متعلق پانامہ کیس کی سماعت کرنے والے بنچ کو رپورٹ پیش کرے گی جبکہ حتمی رپورٹ 60روز بعد جمع کرانے کی پابند ہو گی جس کی روشنی میں سپریم کورٹ وزیراعظم نواز شریف کی اہلیت یا نا اہلی کا فیصلہ کرے گی۔پانامہ کیس کی سماعت کرنے والے بنچ کو رپورٹ پیش کرے گی جبکہ حتمی رپورٹ 60روز بعد جمع کرانے کی پابند ہو گی جس کی روشنی میں سپریم کورٹ وزیراعظم نواز شریف کی اہلیت یا نا اہلی کا فیصلہ کرے گی


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
33%
ٹھیک ہے
17%
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
50%


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

پاکستان

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved