ایک جج نے بھی خلاف فیصلہ دیا تو وزیراعظم نااہل ہوجائیں گے، بابر اعوان
  17  جولائی  2017     |     پاکستان

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک ) تحریک انصاف کے رہنما بابراعوان نے کہا ہے کہ سپریم کورٹ کے تین رکنی بینچ میں سے کسی ایک جج نے بھی وزیراعظم کے خلاف فیصلہ دیا تو نواز شریف کی نااہلی کا فیصلہ ہوجائے گا۔سپریم کورٹ کے باہر میڈیا سے بات کرتے ہوئے بابراعوان کا کہنا تھا کہ نااہلی کی زد میں صرف گارڈ فادر ون نہیں بلکہ گارڈ فادر ٹو بھی ہے، اگر پاناما کیس کی سماعت کرنے والے تین رکنی بنچ میں سے کسی ایک جج نے بھی نواز شریف کے خلاف فیصلہ دیا تو وہ نااہل ہوجائیں گے۔رہنما تحریک انصاف کا کہنا تھا کہ پوری قوم اور وکلا برادری عدالت کے ساتھ ہے ۔بابر اعوان نے کہا کہ وزیراعظم کے استعفے سے متعلق قومی اتفاق رائے بڑھ رہا ہے، میری مسلم لیگ(ق) کے سربراہ چوہدری شجاعت سے بھی بات ہوئی ہے اور انہوں نے بھی وزیراعظم کے استعفی کے مطالبے پر مکمل حمایت کی یقین دہانی کرائی ہے۔

بابر اعوان کا کہنا تھا کہ نوازشریف جمہوریت پر بوجھ اور ملکی سلامتی کے لئے بڑا خطرہ بن چکے ہیں، وہ عالمی سطح پر پاکستان کی سبکی اور تنہائی کا مجب بن رہے ہیں، رنگے ہاتھوں پکڑے جانے کے بعد بھی نوازشریف کا منصب سے چمٹے رہنے کا کوئی جواز نہیں بنتا۔ پاناما کیس میں جے آئی ٹی رپورٹ کے بعد نواز شریف ملک میں فساد اور انارکی کا ماحول پیدا کرنا چاہتے ہیں لیکن ہم کسی کو سپریم کورٹ پر حملہ نہیں کرنے دیں گے اور نا ہی پاناما فیصلے سے کسی کو فرار ہونے دیا جائے گا۔انھوں نے کہا کہ عدالت نے واضح کردیا ہے کہ صرف جے آئی ٹی رپورٹ پر بات ہوگی تاہم کیس میں جے آئی ٹی نہ پہلے فریق تھی اور نہ اب ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ(ن) لیگ میں تمام پرانے لوگ پیچھے کردیے گئے ہیں۔ مسلم لیگ(ن) میں دو گروپ بن چکے ہیں۔ جن میں ایک گروپ مریم نوازگروپ ہے جس کی قیادت کیپٹن(ر)صفدر کررہے ہیں اس گروپ نے(ن) لیگ گروپ کو شکست دے دی ہے۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
50%
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
50%


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

پاکستان

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved